سوشل میڈیا پر مصر میں اسرائیلی خاتون سفیر کی بے دخلی کے مطالبے کی مہم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

گذشتہ چند گھنٹوں کے دوران غزہ کی پٹی میں ہونے والی خوفناک تباہی کے بعد مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ’ایکس‘ پر"اسرائیلی سفیر امیرہ اورون کی مصر سے بے دخلی " کے عنوان سے ایک مہم چل رہی ہے اور یہ عنوان ٹاپ ٹرینڈ کر رہا ہے۔

مصر میں اسرائیلی سفیرہ کی بے دخلی کی یہ مہم ایک ایسے وقت میں جاری ہے جب غزہ کی پٹی میں گذشتہ روز ایک ہسپتال میں پر کیے گئے اسرائیلی وحشیانہ حملے پر عرب ممالک کی طرف سےسخت رد عمل سامنے آیا ہے۔

مصر اور سعودی عرب سمیت کئی مسلمان، عرب اور غیرمسلم ممالک نے غزہ کے المعمدانی ہسپتال پر بمباری کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

غزہ کے ہسپتال پر بمباری کی مذمت کے ساتھ اسرائیل پر غزہ کی پٹی میں جاری فوجی کارروائی بند کرنے کے لیے دباؤ بڑھ رہا ہے۔

مصر نے دنیا کے تمام ممالک خاص طور پر اثر و رسوخ رکھنے والے بڑے ممالک سے ان خلاف ورزیوں کو روکنے کے لیے مداخلت کرنے کا مطالبہ کیا۔ اس نے اسرائیل سے مطالبہ کیا کہ وہ رفح کراسنگ کے آس پاس کے علاقوں کو نشانہ بنانا بند کرے، تاکہ مصر اور باقی دنیا سے امداد پہنچانے کے خواہش مند افراد کو ریلیف اور ریسکیو سروس فراہم کرنے کی اجازت دی جا سکے۔

قابل ذکر ہے کہ غزہ کی پٹی میں کل خونی ترین گذرا۔کل منگل کو اسرائیلی فوج نے غزہ کے عرب الاھلی ہسپتال پر وحشیانہ بمباری کی جس کے نتیجے میں بچوں اور خواتین سمیت پانچ سو فلسطینی شہید اور چھ سو سے زاید زخمی ہوگئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں