نسل پرستانہ تبصروں پر اطالوی وزیر اعظم نے اپنے پارٹنر سے علیحدگی اختیار کر لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اطالوی وزیراعظم جارجیا میلونی نے جمعے کے روز کہا ہے کہ وہ اپنے جیون ساتھی ٹیلی ویژن کی صحافی آنڈ ریا جیامبرونو سے علیحدگی اختیار کر چکی ہیں۔

انہوں نے اپنے سابقہ شوہر پر خواتین کے خلاف نسلی امتیاز پر مبنی تبصروں کا الزام عاید کیا۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ چند ہفتوں میں لائیو نشریات اور دیگر ٹاک شوز میں خواتین کےساتھ تفریق پر مبنی باتیں کیں جس کے بعد انہوں نے ان سے علاحدگی اختیار کر لی ہے۔

میلونی نے اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹس پر لکھا کہ ’’میرا انڈریا جیامبرونو کے ساتھ تعلق جو تقریباً 10 سال پر محیط تھا۔ اب ختم ہو چکا ہے، ہمارے راستے کچھ عرصے سے جدا ہو چکے ہیں اور اب وقت آگیا ہے کہ اسے تسلیم کیا جائے‘‘۔

جورجینا میلونی اور ان کے پارٹنر انڈریا جیامبرونو
جورجینا میلونی اور ان کے پارٹنر انڈریا جیامبرونو

دونوں پارٹنرز کی سات سالہ بیٹی ہے۔

انڈریا جیامبرونو میڈیا سیٹ چینل کے ذریعہ نشر کیا جانے والا ایک نیوز پروگرام پیش کرتا ہے، جو آنجہانی وزیر اعظم سلویو برلسکونی کےورثاء ملکیت MFE میڈیا گروپ سے وابستہ ہیں۔

گینگ ریپ

اس ہفتے کے دو دن "میڈیاسیٹ" کے ایک اور پروگرام میں جیامبرونو کے پروگرام کے اقتباسات نشر کیے گئے، جو لائیو آن ائیر نہیں تھے۔ اس میں وہ نامناسب زبان استعمال کرتے نظر آئے۔ وہ اپنی ایک ساتھی کے قریب ہوتے دکھائی دیے اور اسے یہ کہتے ہوئے سنا گیا "میں تم سے پہلے کیوں نہیں ملا؟"

جمعرات کو نشر ہونے والے ایک سیکنڈ میں، زیادہ ریکارڈنگ میں جیامبرونو کو ایک افیئر کے بارے میں شیخی مارتے ہوئے اور خواتین ساتھیوں کو یہ کہتے ہوئے سنا جا سکتا ہے کہ اگر وہ کسی غیر اخلاقی فعل میں حصہ لیں تو وہ اس کے لیے کام کر سکتی ہیں۔

موصوف اس سے قبل اگست میں اس بات کی وجہ سے تنقید کی زد میں آچکے ہیں۔ وہ ایک گینگ ریپ کیس کے بعد کیے گئے تبصروں میں متاثرہ شخص کو مورد الزام ٹھہراتے نظر آئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں