اسرائیل کی مدد، بائیڈن انتظامیہ نے کانگریس سے اضافی 14 بلین ڈالر کی درخواست کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی صدر جو بائیڈن نے جمعہ کے روز کانگریس سے 105 بلین ڈالر مالیت کی رقم سکیورٹی کے لیے مختص کرنے کی درخواست کردی۔ اس خطیر رقم میں یوکرین کو 61 بلین ڈالر اور اسرائیل کو 14 بلین ڈالر کی فوجی امداد بھی شامل ہے۔ تاہم اس درخواست پر کانگریس میں افراتفری ہونے اور تصادم کھڑا ہونے کا امکان ہے۔

وائٹ ہاؤس آفس آف مینجمنٹ و بجٹ ڈائریکٹر شلندا یانگ نے کانگریس کو لکھے گئے خط میں کہا کہ دنیا دیکھ رہی ہے اور امریکی عوام بجا طور پر توقع کرتے ہیں کہ ان کے رہنما ان ترجیحات کو پورا کرنے کے لیے اکٹھے ہوں گے۔

ایک باخبر ذریعہ کے مطابق غزہ میں جنگ کے آغاز کے بعد سے بائیڈن انتظامیہ یوکرین کے لیے 60 بلین ڈالر اور اسرائیل کے لیے 10 بلین ڈالر کی امداد کی درخواست پر غور کر رہی ہے۔

توقع کی جا رہی ہے کہ بائیڈن کانگریس سے سپلیمنٹل اخراجات کے بل کو جلد منظور کرنے کے لیے کہیں گے کیونکہ واشنگٹن 7 اکتوبر کو اسرائیل پر حماس کے حملے کے بعد مشرق وسطیٰ میں بڑھتے ہوئے تناؤ کے نتائج سے نمٹنے کی کوشش کر رہا ہے۔

باخبر ذرائع نے منگل کو بتایا تھا کہ بائیڈن تقریباً 100 بلین ڈالر کی اضافی فنڈنگ کی درخواست جمع کرانے پر غور کر رہے ہیں جس میں اسرائیل، یوکرین اور تائیوان کو دفاعی امداد کے علاوہ میکسیکو کے ساتھ امریکی سرحد پر سکیورٹی بڑھانے کی کوششوں کے لیے فنڈنگ بھی شامل ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں