قبرص میں اسرائیلی سفارت خانے کے باہر رات گئے معمولی دھماکہ؛ کوئی نقصان نہیں ہوا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

پولیس نے بتایا کہ قبرص کے دارالحکومت نکوسیا میں اسرائیلی سفارت خانے کے باہر رات گئے ایک معمولی سا دھماکہ ہوا۔ تاہم کسی نقصان یا زخمی کی اطلاع نہیں ملی۔

پولیس نے کہا کہ ایک دھاتی چیز جس میں "تھوڑی مقدار میں پائروٹیکنک مواد" موجود تھا، سفارت خانے کے احاطے سے 30 میٹر کے فاصلے پر پھٹی جو نکوسیا کے ایک بہت زیادہ آبادی والے علاقے میں واقع ہے۔

ایک سیکورٹی ذریعے نے بتایا کہ اس علاقے میں موجود 17 اور 21 سال کی عمر کے چار نوجوانوں سے پولیس تفتیش کر رہی تھی۔ زیرِ حراست افراد میں سے ایک کی گاڑی سے پولیس کو 2 چاقو اور ایک ہتھوڑا ملا۔

قبرص کے سرکاری ریڈیو نے بتایا کہ گرفتار شدگان شامی تھے۔

غیر مستحکم شرقِ اوسط کے کنارے پر واقع قبرص نے جزیرے کے مختلف مقامات پر سکیورٹی سخت کر دی ہے۔ تشدد کے تازہ واقعات کے پیشِ نظر حکام نے سفارت خانے کے گرد حفاظتی دائرہ بڑھا دیا اور شہریوں کی سڑکیں بند کر دیں۔

سفارت خانہ 1988 میں بم دھماکے کی ناکام کوشش کا نشانہ بنا تھا جب دھماکہ خیز مواد سے بھری ایک کار قریبی پل پر پھٹ گئی جس میں تین افراد ہلاک ہوئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں