ہالی ووڈ ستاروں کا بائیڈن سے غزہ میں جنگ بندی کے لیے دباؤ ڈالنے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

کامیڈین جون اسٹیورٹ اور آسکر ایوارڈ یافتہ اداکار جوکوئن فینکس سمیت ہالی ووڈ کے درجنوں اداکاروں اور فنکاروں نے امریکی صدر جو بائیڈن کو ایک خط بھیج کر اسرائیل اور غزہ میں جنگ بندی کے لیے دباؤ ڈالنے پر زور دیا ہے۔

اپنے مکتوب میں انہوں نے لکھا ہے کہ "ہم آپ کی انتظامیہ اور تمام عالمی رہ نماؤں سے درخواست کرتے ہیں کہ وہ مقدس سرزمین میں تمام زندگیوں کا احترام کریں اور بلا تاخیر جنگ بندی کا مطالبہ کریں۔ اس میں سہولت فراہم کریں اورغزہ پر بمباری بند کرائیں، یرغمالیوں کی بحفاظت بازیابی کو یقینی بنائیں"۔

انہوں نے خط میں کہا کہ"ہم آنے والی نسلوں کو غزہ جنگ میں خاموش تماشائی رہنے کی کہانی نہیں سنانا چاہتے۔ یہ نہ ہو کہ تاریخ میں لکھا جائے کہ ہم خاموش کھڑے رہے اور جنگ روکنے کے لیے کچھ نہیں کیا"۔

درایں اثناء اقوام متحدہ کے ایمرجنسی ریلیف کوآرڈینیٹر مارٹن گریفتھس نے یو این نیوز کو بتایا کہ 'تاریخ دیکھ رہی ہے'۔"

مکتوب پر تقریبا 60 ادارکاروں نے دستخط کیے جن میں سوزن سارینڈن کرسٹن سٹیورٹ کوئٹا برنسن، ریمی یوسف، ریز احمد ماھرشالہ علی اور دیگر شامل تھے۔

مکتوب کہا گیا ہے کہ "انسانی امداد کوغزہ کے رہائشیوں تک پہنچانے کی اجازت ہونی چاہیے"۔

بائیڈن نے جمعہ کو کہا کہ انہیں یقین ہے کہ آنے والے گھنٹوں میں امداد سے لدے ٹرک غزہ پہنچ جائیں گے۔

جمعہ کے روز اسرائیل نے غزہ کی پٹی پراپنی پرتشدد بمباری جاری رکھی۔ یہ بمباری ایسے وقت میں جاری ہے جب امریکی صدرجو بائیڈن نے حماس کو "ہمسایہ ملک کی جمہوریت کو تباہ کرنے" کےمترادف قرار دیا۔ العربیہ اور الحدث کے نامہ نگار نے اطلاع دی ہے کہ غزہ کی پٹی سے اسرائیلی بستیوں پر دوبارہ راکٹ حملے کیے گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں