امریکہ میں فائرنگ سے کم سے کم 22 افراد ہلاک، 50 سے زائد زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکہ کی ریاست مین میں مسلح شخص کی فائرنگ سے کم از کم 22 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہو گئے ہیں۔ پولیس حکام کے مطابق فائرنگ کرنے والا مشتبہ شخص فرار ہو گیا ہے جس کی تلاش جاری ہے۔

ریاست مین کے شہر لیوسٹن میں ایک شخص نے دو مختلف مقامات پر جدید ہتھیار سے شراب خانے اور ریستوران میں لوگوں کو نشانہ بنایا اور فرار ہو گیا۔

خبر رساں ادارے 'ایسوسی ایٹڈ پریس' کے مطابق لیوسٹن پولیس کا بتانا ہے کہ مسلح شخص نے پہلے اسکیمگیز بار میں فائرنگ کی جس کے بعد لگ بھگ ساڑھے چھ کلو میٹر دور واقع باؤلنگ کلب میں لوگوں کو نشانہ بنایا۔

پولیس حکام نے مشتبہ رائفل پکڑے ایک ملزم کی تصاویر جاری کی ہیں۔ اس کے علاوہ ایک گاڑی کی تصویر بھی جاری کی ہے جو مبینہ طور پر اس واقعے میں استعمال ہوئی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ فائرنگ کے واقعے میں ملوث شخص کی تلاش جاری ہے۔

مین ڈپارٹمنٹ آف پبلک سیفٹی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ قانون نافذ کرنے والے ادارے اس وقت دو مختلف مقامات پر سرچ آپریشن میں مصروف ہیں اس لیے شہری سڑکوں کو خالی کر دیں اور گھروں میں رہتے ہوئے دروازوں کو لاک کر لیں۔

ریاست مین کی گورنرجینٹ ملز نے ایک بیان میں کہا ہے کہ انہیں واقعے سے متعلق بریفنگ دی گئی ہے اور وہ پبلک سیفٹی حکام کے ساتھ مسلسل رابطے میں رہیں گی۔

دوسری جانب وائٹ ہاؤس کا بھی کہنا ہے کہ صدر جو بائیڈن کو فائرنگ کے واقعے سے متعلق بریف کر دیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں