برسلز: اسرائیل ۔ غزہ فوری جنگ بندی پر یورپی یونین کا اتفاق نہ ہو سکا

سپین کی تجویز پر چھ مہینوں کے اندر مشرق وسطیٰ امن کانفرنس کے لیے تیار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یورپی کونسل نے مشرق وسطیٰ میں امن تجاویز کو آگے بڑھانے کے لیے سپین کی امن کانفرنس کی تجویز سے اتفاق کر لیا ہے۔

مجوزہ کانفرنس امکانی طور پر چھ ماہ تک ہو اسرائیل اور حماس کے درمیان تصادم روکنے کےلیے ہو گی۔ سپین کے قائم مقام وزیر اعظم نے اس بارے میں جمعہ کے روز بتایا ہے۔

27 اکتوبر کو برسلز میں یورپی یونین کے ایک اجلاس میں سپین نے یورپی یونین پر زور دیا کہ یورپی یونین کی طرف سے اسرائیل اور حماس کے درمیان فوری جنگ بندی کا مطالبہ کیا جائے تاکہ ہزاروں تک پہنچی ہلاکتوں میں مزید اضافے کو روکا جا سکے۔

تاہم کئی یورپی ممالک نے اس مطالبے کی زبان کی آڑ لے کر اس کی مخالفت کر دی، جس کی وجہ سے یورپی یونین کی جانب سے متفقہ طور پر فوری جنگ بندی کا مطالبہ سامنے نہ آ سکا۔

قائم مقام وزیر اعظم سپین نے کہا 'اس کے باجود یورپی یونین کے ممبروں نے جنگ میں وقفے کرنے سے اتفاق کیا ہے۔ نیز غزہ کے لیے امداد بھجوانے کی راہداری کھولنے سے اتفاق کیا، اسے بھی کلی اتفاق یک طرفہ ایک راستہ ہی سمجھا جانا چاہیے۔

انہوں نے کہا اس سلسلے میں یورپی یونین کے ممبران نے متبادل تجویز کے طور پر میڈرڈ امن کانفرنس کی تجویز سے اتفاق کر لیا ہے۔ یہ مجوزہ کانفرنس مسئلے کے لیے دو ریاستی حل کی طرف ایک نیا دھکا ہو گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں