بھارت میں امارات کی 50 ارب ڈالر کی نئی سرمایہ کاری کی تیاری

باقاعدہ اعلان 2024 میں بھارتی عام انتخابات سے قبل کیا جائے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

متحدہ عرب امارات بھارت میں 50 ارب ڈالر کی سرمایہ کرنے پر غور کر رہا ہے۔ بھارت امارات کا دوسرا بڑا تجارتی شراکت دار ہے اور دنیا میں تیزی سے آگے بڑھنے والی معیشت بھی۔

متحدہ عرب امارات کی اس بڑی سرمایہ کاری سے متعلقہ افراد کے حوالے سے معلوم ہوا ہے کہ اس بڑی سرمایہ کاری کے سلسلے میں ابتدائی وعدے اگلے سال ماہ مئی میں سامنے آ سکتے ہیں۔

تاہم ابھی اس بارے میں امارات کی طرف سے کوئی باقاعدہ اعلان سامنے نہیں آیا ہے۔ اس لیے متعلقہ افراد نے اپنا ظاہر نہ کرنے پر اصرار کیا۔ بتایا گیا ہے کہ اس نئی سرمایہ کاری سے متعلق امور بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کی اماراتی صدر شیخ محمد بن زاید کے ساتھ ماہ جولائی میں ہونے والی ملاقات کے نتیجے میں طے کیے جا رہی ہیں۔

واضح رہے امارات اور بھارت دونوں کے درمیان پچھلے دس برسوں کے دوران دو طرفہ تعاون و سرمایہ کاری کے معاہدوں میں تیزی آئی ہے۔ دونوں طرف سے تیل کے علاوہ کی تجارت پر ایک سو ارب ڈالر کی سرماایہ کاری کا ارادہ ہے۔

مودی کا امارات کا حالیہ مہینوں میں ہونے والا دورہ 2014 سے اب تک امارات کا پانچواں دورہ تھا۔ اس سے قبل وزیر اعظم اندرا گاندھی نے 1981 میں امارات کا دورہ کیا تھا۔

بتایا گیا ہے کہ نئی سرمایہ کاری بھارت میں انفراسٹرکچر کے علاوہ ریاستی ترقیاتی منصوبوں پر ترجیحاً کی جائے گی۔ امکان ظاہر کیا گیا ہے امارات کی طرف سے اس نئی سرمایہ کاری کا باضابطہ اعلان مودی کے 2024 کے متوقع انتخابات سے پہلے کیا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں