واگنر گروپ کی حزب اللہ کو فوجی معاونت سے متعلق خبروں کو بے بنیاد ہیں: روس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

جمعہ کے روز کریملن نے وال اسٹریٹ جرنل کی اس رپورٹ کو مسترد کردیا ہے جس میں کہا گیا تھا کہ امریکا کے پاس انٹیلی جنس معلومات موجود ہیں جس سے پتا چلتا ہے کہ روسی نجی ملٹری گروپ واگنر لبنانی حزب اللہ گروپ کو فضائی دفاعی ساز و سامان فراہم کرنے کا ارادہ رکھتا ہے۔

کریملن کے ترجمان دمتری پیسکوف نے کہا کہ "واگنر موجود نہیں ہے اور اس لیے ایسے الزامات بے بنیاد ہیں"۔

امریکی حکام نے کہا کہ امریکا کے پاس انٹیلی جنس معلومات ہیں جو اس بات کی نشاندہی کرتی ہیں کہ روسی واگنر گروپ ایک نیم فوجی گروپ ہے لبنانی حزب اللہ کو فضائی دفاعی نظام فراہم کر سکتا ہے۔

امریکی وال سٹریٹ جرنل کے مطابق زیر بحث فضائی دفاعی نظام SA-22 ہے جو طیاروں کو مار گرانے کے لیے طیارہ شکن میزائل اور فضائی دفاعی میزائلوں کا استعمال کرتا ہے۔

ایک امریکی اہلکار نے کہا کہ واشنگٹن نے ابھی تک حزب اللہ کو دفاعی میزائل سسٹم بھیجنے کی تصدیق نہیں کی ہے، لیکن وہ ان بات چیت کی نگرانی کر رہا ہے جس میں واگنر اور حزب اللہ شامل ہیں، یہ وضاحت کرتے ہوئے کہ ممکنہ ڈیل واشنگٹن میں بڑی تشویش کا باعث ہے۔

امریکا نے مشرقی بحیرہ روم میں ایک طیارہ بردار بحری جہاز تعینات کیا تاکہ غزہ میں جاری جنگ کے ساتھ مل کر حزب اللہ کو اسرائیل کے خلاف شمالی محاذ کھولنے سے روکا جا سکے۔

واگنر کے شام میں ملازمین موجود ہیں جہاں حزب اللہ کے جنگجو بھی موجود ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں