غزہ میں انسانیت کے خلاف جرائم جاری ہیں، فوری جنگ بندی کیا جائے: صدر ایردوآن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ترکیہ کے صدر نے غزہ میں فوری جنگ بندی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ غزہ میں انسانیت کے خلاف جرائم کیے جا رہے ہیں۔

قازقستان کے دارالحکومت میں گفتگو کرتے ہوئے ایردوآن کہا کہنا تھا 'ایسا انسانیت کے ہاں کوئی تصور یا نظریہ نہیں ہے جو غزہ میں سات اکتوبر سے جاری ظلم و جبر کا جواز پیش کرسکتا ہو۔'

ایردوآن ان مسلم رہنماوں میں سے ایک ہیں جو فلسطینی مزاحمتی تحریک کے زبردست حامی ہیں، وہ ترکیہ میں فلسطین کے حق میں ریلیوں کاحصہ بنتے ہیں ان سے خطاب کرتے ہیں اور سات اکتوبر سے معاملات کی بہتری کے لیے مذاکرات کار کے طور پر بھی متحرک ہیں۔

ترکیہ کے صدر نے کہا 'پچھلے 28 دنوں سے غزہ میں جبر اور ظلم جاری ہے، غزہ میں جو کچھ ہو رہا ہے یہ انسانیت کے خلاف جرائم کے ذمرے میں آتا ہے۔'

'اس لیے ہماری ترجیح اول انسانی بنیادوں پر فوری جنگ بندی ہے۔ ترکیہ اس مقصد کے لیے کام کر رہا ہے۔'

انہوں نے کہا 'امن اور اصلاح احوال کے لیے ایسے نئے 'میکانزم' کی ضرورت ہے جو ہرایک کی کسی امتیاز کے بغیر سلامتی کا ضامن بنے، خواہ کوئی مسلمان ہو، مسیحی ہو یا یہودی ہو۔ 'ان کا یہ بھی کہنا تھا' ہماری کوششیں ایک بین الاقوامی امن کانفرنس کا انعقاد ہے۔'

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں