غزہ میں فرانسیسی انسٹی ٹیوٹ پر بمباری، پیرس نے اسرائیل سے وضاحت طلب کرلی

فرانسیسی وزارت خارجہ نے تصدیق کی کہ ادارے کے اندر کوئی ملازم یا فرانسیسی شہری موجود نہیں تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

وزارت خارجہ کے اعلان کے مطابق جمعہ کو فرانس نے غزہ میں فرانسیسی انسٹی ٹیوٹ کو نشانہ بنانے والی بمباری کے بعد اسرائیل سے وضاحت طلب کی۔ فرانسیسی وزارت خارجہ نے کہا کہ اسرائیلی حکام نے ہمیں مطلع کیا کہ غزہ میں فرانسیسی انسٹی ٹیوٹ کو اسرائیلی حملے کا نشانہ بنایا گیا ہے۔ ہم نے اسرائیلی حکام سے کہا کہ وہ ہمیں بلا تاخیر مناسب ذرائع سے ملوث عناصر کے متعلق آگاہ کریں۔ فرانسیسی وزارت خارجہ نے کہا کہ انسٹی ٹیوٹ کے اندر کوئی فرانسیسی ملازم یا شہری موجود نہیں تھا۔

جمعہ کو غزہ کی پٹی پر اسرائیلی فوج کی فضائی، زمینی اور سمندری بمباری کا اٹھائیسواں دن تھا۔ غزہ کی پٹی میں وزارت صحت نے بتایا کہ اسرائیلی حملوں میں کم از کم 9,227 فلسطینی ہلاک ہوئے جن میں 3,826 بچے بھی شامل ہیں ۔ زخمیوں کی تعداد 23,000 سے تجاوز کرگئی ہے۔ فرانس نے غزہ میں اقوام متحدہ کی مقامات اور انسانی ہمدردی کے عملے پر حملوں کی مذمت کی۔

بدھ کے روز، فرانس نے جبالیا کیمپ پر اسرائیلی چھاپوں کے نتیجے میں ہونے والے بھاری نقصانات کے بارے میں اپنی گہری تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ شہری آبادی کا تحفظ بین الاقوامی قانون کے تحت ایک ذمہ داری ہے اور اس کی پابندی ہر ایک پر ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں