غیر ملکیوں اور زخمی فلسطینیوں کو غزہ سے نکالنے کے لیے رفع راہداری دوبارہ کھل گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

غزہ میں مسلسل اسرائیلی بمباری اور حملوں کی زد میں رہنے والے غیر ملکیوں کو غزہ سے نکالنے میں پیر کے روز ایک بار پھر رفح کی راہداری کھول دی گئی۔

غزہ میں حماس کی حکومت کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ رفح راہدری کھلنے سے دوہری شہریت رکھنے والوں کے علاوہ زخمی فلسطینیوں کو بھی نکلنے موقع دیا گیا ہے۔

ابتدائی اعلان کے مطابق رفح راہداری کا یہ راستہ تین دن تک یعنی پیر کے بعد بدھ اور جمعرات کو بھی کھلا رکھا جائے گا۔ اس سے قبل ہفتے اور اتوار کے روز ایمبولینسز کو جاری کیے گئے اجازت ناموں کے ایشو پر تنازعہ پیدا ہو گیا تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ رفح راہداری کا پیر کے روز کھلنا حماس اور اسرائیل کے ایک بالواسطہ معاہدے کے بعد ممکن ہوا ہے۔ پیر کے روز 30 زخمیوں کو غزہ سے باہر جانے کی اجازت ملی۔

مصر کے سرحدی حکام کے مطابق اس مقصد کے لیے چھ ایمبولینسیں رفح کے اس پار آئی تھیں۔ امریکہ نے اتوار کے راز یہ اعلان کیا تھا کا اس کے 300 شہریوں کو محفوظ طور پر غزہ سے نکلنے کا موقع مل گیا ہے جبکہ برطانیہ کے 100 شہری محفوظ طور پر غزہ سے انخلا کر چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں