فلسطین اسرائیل تنازع

جنگ بندی کےلیےوقت مناسب نہیں، غزہ پر دوبارہ اسرائیلی قبضے کے خلاف ہیں:امریکا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

وائٹ ہاؤس نے منگل کو کہا ہے کہ غزہ میں جنگ بندی کے لیے یہ وقت مناسب نہیں ہے اور ہم مخصوص مدت اور مقاصد کے لیے جنگ بندی کے خواہاں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حماس تحریک غزہ میں مستقبل کا حصہ نہیں بن سکتی۔ وہاں کی حکومت کے لیے مشاورت جاری ہے۔

یہ بیان اس وقت سامنے آیا ہے جب امریکا نے منگل کو اعلان کیا تھا کہ وہ اسرائیل کے غزہ کی پٹی پر نئے طویل مدتی قبضے کی مخالفت کرتا ہے، جب اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو نے جنگ کے بعد محاصرہ زدہ علاقے کے لیے "جامع سکیورٹی" کو یقینی بنانے کا وعدہ کیا تھا۔

امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان ویدانت پٹیل نے صحافیوں کو بتایا کہ "عام طور پر ہم غزہ پر دوبارہ قبضے کی حمایت نہیں کرتے اور نہ ہی اسرائیل اس کی حمایت کرتا ہے"۔

نیتن یاہو نے سوموار کو اعلان کیا تھا کہ اسرائیل حماس کے خلاف اس وقت جاری جنگ کے بعد ایک غیر معینہ مدت کے لیے غزہ کی پٹی میں "جامع سکیورٹی کی ذمہ داری" سنبھالے گا۔

نیتن یاہو نے امریکی اے بی سی نیوز نیٹ ورک کے ساتھ ایک ٹیلی ویژن انٹرویو میں کہا کہ "اسرائیل غیر معینہ مدت کے لیے غزہ میں سلامتی کی مجموعی ذمہ داری سنبھالے گا"۔

انہوں نے مزید کہا کہ "اگرہم سکیورٹی کی یہ ذمہ داری قبول نہیں کرتے ہیں تو ہمیں ایک بار پھر حماس کی دہشت گردی کے اس پیمانے پر پھیلنے کا سامنا کرنا پڑے گا جس کا ہم تصور بھی نہیں کر سکتے"۔

اس سوال کے جواب میں کہ جنگ کے بعد غزہ کی پٹی پر کس کی حکومت کرنی ہے نیتن یاہو نے کہا کہ ’’وہ لوگ جو حماس کے راستے پر نہیں چلنا چاہتے‘‘۔

اسرائیلی فوج کے مطابق 7 اکتوبر کو حماس نے جنوبی اسرائیل پر ایک غیر معمولی اچانک حملہ کیا، جس میں کم از کم 1,400 افراد ہلاک اور 241 کو یرغمال بنا لیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں