روسی طیارہ غزہ کے لیے 25 ٹن امدادی سامان کے ساتھ مصر پہنچ گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

روس نے اسرائیلی بمباری سے تباہ حال لاکھوں فلسطینی شہریوں کے لیے انسانی بنیادوں پر 25 ٹن امدادی سامان مصر پہنچا دیا ہے۔

غزہ میں بے گھر ہو چکے لاکھوں فلسطینی شہری اسرائیل کے زیر محاصرہ ہیں، اس لیے ان تک پانی، خوراک اور ادویات تک کی سپلائی نہ ہونے کے برابر ہے۔

پچھلے ایک ماہ میں غزہ کے ان بے بس شہریوں کو امدادی سامان کے صرف پانچ سو ٹرک پہنچائے گئے ہیں، اتنی تعداد میں امدادی سامان کے ٹرک جنگ سے پہلے عام دنوں میں یومیہ بنیادوں پر ضروری ہوتے تھے۔

روسی وزارت ہنگامی امور کے مطابق ایک 25 ٹن کے امدادی سامان سے لدا ہوا خصوصی کارگو مصر لے کر گیا تھا۔

وزارت نے یہ اطلاعات سوشل میڈیا کے ذریعے پیش کی ہیں، سوشل میڈیا پر مصر بھجوائے گئے خصوصی طیارے کی تصاویر بھی دکھائی گئی ہیں۔

روس کی طرف سے اب تک امدادی سامان لے جانے والے کم از کم پانچ طیارے مصرے بھیجے جا چکے ہیں۔ روس نے غزہ میں جاری تباہی اور ہزاروں ہلاکتوں کو روکنے کے لیے متعدد بار جنگ بندی کا مطالبہ بھی کیا ہے۔

تاہم روس کا سب سے بڑا مخالف ملک امریکہ اور اس کے یورپی اتحادی اسرائیل کے ساتھ کھڑے ہیں جو جنگ بندی کی حمایت نہیں کرتے۔ اب تک ساڑھے چار ہزار کے قریب بچوں سمیت لگ بھگ گیارہ ہزار فلسطینی صرف غزہ میں اسرائیلی بمباری سے ہلاک ہو چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں