عرب مندوبین کا آئرش پارلیمنٹ کے سپیکر سے غزہ تنازعہ پر تبادلۂ خیال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی پریس ایجنسی نے جمعے کو رپورٹ کی کہ آئرلینڈ میں سعودی عرب کے سفیر نیل الجبیر اور ملک کے دیگر عرب سفراء نے آئرش پارلیمنٹ کے اسپیکر شان او فیرگھیل سے ملاقات کی۔

ان کی گفتگو میں غزہ کی پٹی پر مسلسل اسرائیلی حملے شامل تھے اور سفراء نے آئرلینڈ سے مطالبہ کیا کہ وہ بین الاقوامی انسانی قانون کے اصولوں اور اطوار کو مدنظر رکھتے ہوئے فوجی کارروائیوں کو روکنے، شہریوں کے تحفظ، یرغمالیوں اور قیدیوں کی رہائی کو محفوظ بنانے اور فلسطینیوں کی جبری نقلِ مکانی کا خاتمہ کرنے کی بین الاقوامی کوششوں میں شامل ہوں۔

سفراء نے اس اہم ضرورت پر بھی زور دیا کہ اس علاقے میں ایک انسانی تباہی کو روکنے کے لیے فوری امدادی اور طبی سامان کی محفوظ اور بغیر کسی پابندی کے ترسیل کی جائے جو خواتین اور بچوں سمیت معصوم لوگوں کی جانیں لے رہی ہے، اور وسیع تر خطے میں سلامتی اور استحکام کے لیے اس کے سنگین نتائج ہو سکتے ہیں۔

غزہ کی وزارتِ صحت کے اعداد و شمار کے مطابق حماس کی جانب سے 7 اکتوبر کو اسرائیل پر اچانک حملے کے بعد سے اسرائیلی حملوں کے نتیجے میں غزہ کی پٹی میں 11,000 سے زائد فلسطینی ہلاک ہو چکے ہیں جن میں سے نصف کے قریب بچے ہیں۔

سعودی پریس ایجنسی نے اطلاع دی کہ جمعرات کو الجبیر اور ان کے ساتھی عرب سفراء نے آئرش صدر مائیکل ہیگنس کے ساتھ بھی اسی طرح کی گفتگو کی۔ اس ملاقات کے دوران انہوں نے صدر کو بتایا کہ خطے میں سلامتی اور استحکام کو یقینی بنانے کا واحد راستہ ایک منصفانہ اور جامع امن ہے جو فلسطینی عوام کے تمام جائز حقوق کو یقینی بنائے۔

انہوں نے غزہ کی پٹی کی تازہ ترین پیش رفت پر بھی تبادلۂ خیال کیا اور عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ اسرائیلی جارحیت کو روکنے اور محصور علاقے کی ناکہ بندی ختم کرنے کے لیے مؤثر، فوری اور ضروری اقدامات کرے۔ انہوں نے خبردار کیا کہ یہ تنازعہ نہ صرف فلسطینی عوام بلکہ وسیع تر خطے کے لیے خطرناک نتائج کا حامل ہو سکتا ہے اور دیرپا امن کے حصول کے امکانات کو نقصان پہنچا سکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں