فلسطین اسرائیل تنازع

’’بین الاقوامی برادری غزہ کے سلسلے میں اپنی ذمہ داریاں ادا کرنے میں ناکام ہوئی‘‘

جنگ میں وقفے نہیں، غیر مشروط اور مستقل جنگ بندی چاہیے؛ اسرائیل بین الاقوامی قوانین سے بالاتر کیوں؟ عرب اسلامی مشترکہ سربراہ کانفرنس سے سربراہان کے خطابات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

مسلم اور عرب دنیا کے مختلف ممالک کے سربراہان نے غزہ میں اسرائیل کی طرف سے بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزیوں پر عالمی برادری کو اپنی ذمہ داریاں نبھانے میں ناکام قرار دیا ہے۔

ان رہنماوں نے اسرائیل کے ہاتھوں غزہ میں ہزاروں فلسطینیوں کی ہلاکت کو فلسطینیوں کی نسل کشی کا نام دیا اور مطالبہ کیا کہ مسئلے کے مستقل حل کی طرف بڑھنے کے لیے پائیدار اور مستقل جنگ بندی کی جائے۔

محمود عباس صدر فلسطینی اتھارٹی

غیر معمولی سربراہ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے فلسطینی اتھارٹی کے صدر محمود عباس نے کہا ' اسرائیل غزہ میں فلسطینیوں کی نسل کشی کی جنگ کر رہا ہے۔ ان کا کہنا تھا ایسی جنگ کا فلسطینیوں کو کبھی سامنا نہیں رہا ہے۔ اس سے پہلے اس طرح کی کوئی مثال موجود نہیں ہے۔ ہم امریکہ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ اسرائیل پر دباؤ ڈالے اور اسرائیلی کی جارحیت رکوائے۔

رجب طیب ایردوآن صدر ترکیہ

ترکیہ کے صدر رجب طیب ایردوآن نے ریاض میں طلب کی گئی غیر معمولی سربراہی کانفرنس سے اپنے خطاب میں کہا ' اس جاری مسئلے کا مستقل اور پائیدار حل تلاش کرنے کے لیے بین الاقوامی امن کانفرنس کے انعقاد کی ضرورت ہے۔ تاکہ اسرائیل اور فلسطینیوں کے درمیان تصادم کا حل نکل سکے۔ ایردوآن نے کہا ۔ ہم جنگ میں دو چار گھنٹوں کا وقفہ نہیں چاہتے۔ ہم مستقل جنگ بندی چاہتے ہیں اور مسئلے کا مستقل حل چاہتے ہیں۔'

عبدالفتاح السیسی
عبدالفتاح السیسی

عبدالفتاح السیسی صدر مصر

غزہ میں جاری جنگ کے سلسلے میں اسلامی دنیا اور عرب ممالک کی غیر معمولی سربراہ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مصری صدر عبدالفتاح السیسی کا کہنا تھا 'غزہ کو مزید تباہی بچانے اور بڑے انسانی المیے بچنے کے لیے ضروری ہے کہ غزہ میں بغیر رکاوٹوں کے غیر مشروط جنگ بندی کی جائے۔ ایک فوری اور پائیدار جنگ بندی ضروری ہے۔'

انہوں نے مزید کہا ' غزہ کے لوگوں کے لیے اجتماعی سزا کی پالیسیاں ناقابل قبول ہیں، اسرائیل کے حق دفاع کا دعویٰ بلا جواز ہے اور ہے ہم اسرائیل کے اس دعوے سمیت کسی بھی دعوے کو قبول نہیں کر سکتے۔ اسرائیل کو غزہ کے خلاف جاری جنگ فوری بند کرنا ہوگی۔'

شیخ تمیم بن حماد آل ثانی امیر قطر

سربراہ کانفرنس سے قطر کے امیر شیخ تمیم بن حماد الثانی نے اپنے خطاب میں کہا 'سوال یہ ہے کہ بین الاقوامی برادری اسرائیل کے ساتھ کب تک ہر قانون سے بالا تر سمجھتے ہوئے سلوک کرے گی۔ گویا اسرائیل کو ہر قانون سے بالاتر قرار دے دیا گیا ہے۔

شیخ تمیم بن حماد آل ثانی
شیخ تمیم بن حماد آل ثانی

ان کا مزید کہنا تھا کہ حقیقت یہ ہے کہ غزہ میں فلسطیننیوں کے خلاف اسرائیلی بمباری کو روکنے میں بین الا قوامی برادری ناکام رہی ہے۔ تاہم امید کرتے ہیں کہ جلد ہی غزہ کی پٹی میں انسانی بنیادوں پر مستقل جنگ بندی ہو جائے گی۔

بشار الاسد شامی صدر

غیر معمولی عرب اسلامی سربراہی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے شامی صدر بشار الاسد کا کہنا تھا کہ غزہ میں جاری اسرائیلی تشدد کے باعث صہیونی ریاست کے ساتھ کسی بھی قسم کا سیاسی عمل روک دینا چاہئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں