مصر میں خواتین کو ہراساں کرنے والا غیر ملکی سیاح گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

گذشتہ چند گھنٹوں کے دوران مصر میں سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پرایک ویڈیو تیزی سے وائرل ہورہی ہے جس میں دکھایا گیا ہے کہ ایک اسرائیلی سیاح مصری لڑکیوں کو ہراساں کر رہا ہے۔

دوسری طرف مصری وزرات داخلہ نے کہا ہے کہ پولیس نے ملزم کو حراست میں لے کر اس سے پوچھ گچھ شروع کردی ہے۔

اسرائیل کے قریب واقع جنوبی سیناء گورنری میں واقع شہر دہب کے ساحل پر ایک اسرائیلی سیاح کی مکروہ حرکات پر عوامی حلقوں میں شدید غم وغصے کی لہر دوڑ گئی۔

ویڈیو کے دوران سیاح نےاس مقام پر موجود دو مصری نوجوان خواتین سے کہا ’’میرے لیے یہ سرزمین اسرائیل ہے، آپ سیاست کے بارے میں کچھ نہیں جانتے‘‘۔

پھر اس نے انہیں نامناسب الفاظ بولے جبکہ ایک لڑکی نے اسے بیمارذہن کا شخص قرار دیا۔

ویڈیو پر سوشل میڈیا پر سخت رد عمل سامنے آیا ہے اور سوشل میڈیا صارفین نے اسرائیلی سیاح کی گرفتاری اور اس کے خلاف خواتین کو ہراساں کرنے کا مقدمہ چلانے کا مطالبہ کیا ہے۔

ملزم گرفتار

واقعے کے سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد مصری وزارت داخلہ نے اس کا نوٹس لیتے ہوئے ملزم کو گرفتار کرلیا ہے۔

وزرات داخلہ نے منگل کو ایک سرکاری بیان میں کہا کہ سوشل میڈیا پر گردش کرنے والی ویڈیو حقیقی ہے اور سیاح کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

تاہم اس نے واضح کیا کہ زیر حراست شخص کے پاس اسرائیل کی نہیں بلکہ کسی اور ملک کی شہریت ہے۔ اس نے وضاحت کی کہ سیاح نے دونوں لڑکیوں کے ساتھ بدزبانی جس کے بعد انہوں نے واقعے کے بارےمیں پولیس کو مطلع کیا۔

غیرملکی سیاح کو گرفتار کر کے اس کے خلاف قانونی کارروائی شروع کردی گئی ہے۔

قابل ذکر ہے کہ دہب شہر شرم الشیخ شہر سے تقریباً 100 کلومیٹر کے فاصلے پر خلیج عقبہ پر واقع ہے۔ یہ شہر اپنے صاف ساحلوں اور مرجانی چٹانوں سے مالا مال غوطہ خوری اور سنورکلنگ سائٹس کے لیے مشہور ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں