’تم غزہ کے بچوں کو مار رہے ہو‘ صحافی کا ٹرین میں امریکی سینیٹر سےمکالمہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

غزہ میں جاری لڑائی کے بارے میں امریکا کے موقف اور امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلینکن کے غزہ جنگ بارے جو بائیڈن کی انتظامیہ کے نقطہ نظر کے بارے میں اختلاف کے اعتراف کے بعد ڈیموکریٹک سینیٹر کرس کونز کو ایک شرمناک صورتحال کا سامنا کرنا پڑا۔

ٹرین کے سفر میں امریکی سینیٹر کا تعاقب

امریکی سینیٹر ٹرین میں سفرکررہے تھے تواس مشہور صحافی ہارون میٹی نے انہیں روکا اور 4600 سے زائد بچوں سمیت ہزاروں فلسطینی شہریوں کو ہلاک کرنے کے لیے اسرائیل کے ہتھیاروں کے استعمال میں امریکا کے ملوث ہونے کے بارے میں واضح جواب دینے کا مطالبہ کیا۔

صحافی نے سینیٹر سے استفسار کیا کہ انہوں نے 39دن سے محاصرے کا شکار غزہ میں جنگ بندی کا مطالبہ کرنے سے کیوں انکار کیا۔ انہوں نے کہا کہ غزہ میں ہزاروں بچے اسرائیلی فوج کی پرتشدد مہم کا نشانہ ہے اور اس کے ویڈیو ثبوت موجود ہیں۔

تاہم کرس کونزنے کوئی جواب نہیں دیا بلکہ صحافی پر ان کی رازداری پر حملہ کرنے کا الزام لگایا۔ اس پر اسے اور دیگر ٹرین کے مسافروں کو پریشان کرنے کا الزام لگایا۔

امریکی سیاستدان نے صحافی سے کہا کہ وہ ان سے دور رہیں اور ان پر براہ راست تنقید اور الزامات لگانا بند کریں۔

صحافی کے اصرار کے پیش نظر کونز نے ٹرین کے عملے سے مداخلت کرنے اور میٹی کو اپنی گفتگو مکمل کرنے سے روکنے کے لیے مدد کی درخواست کی۔

طویل بحث کے بعد سیاست دان صحافی کو جواب دینے پر مجبور ہوا۔ کونز نے کہا کہ وہ غزہ میں جنگ بندی یا کسی جنگ بندی پر رضامند نہیں ہوں گے اور وہ وہاں اسرائیلی فوجی کارروائیوں کی حمایت کرتے ہیں۔انہوں کہا کہ امریکی ہتھیار تل ابیب بھیجے گئے تھے۔ تاہم انہوں نے غزہ میں ہزاروں بچوں جس نے صحافی کو غزہ میں ہزاروں بچوں کے قتل کی طرف اشارہ کرتے ہوئے جواب کا مذاق اڑایا۔

امریکا کے اندر تنقید!

صحافی اور امریکی سیاست دان کے درمیان گفتگو کی ویڈیو سوشل میڈیا پر جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئی جس نے غزہ میں امریکی موقف پر تنقید کرنے والے حلقوں کو اجاگر کیا۔

(سی این این) کے مطابق امریکی وزیرخارجہ انٹونی بلoنکن کے اس اعتراف کے ساتھ ہی سامنے آیا ہے کہ جس میں ان کا کہنا تھا کہ صدرجو بائیڈن کی انتظامیہ کے اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ کے حوالے سے ان کے محکمے میں اختلافات موجود ہیں۔

بلiنکن نے محکمہ خارجہ کے ملازمین کو ایک ای میل میں کہا کہ محکمے کے کچھ ملازمین اس طریقہ کار سے اختلاف کر سکتے ہیں جو ہم اختیار کر رہے ہیں یا اس بارے میں رائے رکھتے ہیں کہ کیا بہتر کیا جا سکتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ "بہت سے فلسطینی شہری ہلاک ہو چکے ہیں اور ان کے مصائب کو کم کرنے کے لیے بہت کچھ کیا جا سکتا ہے اور کیا جانا چاہیے۔"

مقبول خبریں اہم خبریں