امریکا کی صدر بنی تو سوشل میڈیا پر تخلص کی اجازت نہیں دوں گی:نکی ہیلی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

جنوبی کیرولائنا کی سابق گورنر اور امریکی صدارتی انتخابات کے لیے ریپبلکن امیدوار نکی ہیلی نے سوشل میڈیا میں اصلاحات کا مطالبہ کیا ہے۔ جب کہ اطلاعات ہیں کہ ہیلی خود اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹس پر "نمارتا رندھاوا" تخلص استعمال کرتی ہیں۔ .

نکی ہیلی نے’ایکس‘ پلیٹ فارمر پر پوسٹ کردہ ایک ویڈیو کلپ میں کہا کہ "جب میں امریکا میں صدر بن جاؤں گی تو سوشل میڈیا کمپنیوں کوامریکا کے لیے نیا الگورتھم اپنانا ہوگا تاکہ ہمیں پتا چلے کہ وہ کیا چھپا رہے ہیں"۔

انہوں نے مزید کہا کہ "دوسری بات یہ ہے کہ سوشل میڈیا پر موجود ہر شخص کے نام سے تصدیق کی جانی چاہیے ‘‘۔

یہ سب سے پہلے اور سب سے اہم قومی سلامتی کے لیے خطرہ ہے۔ جب آپ ایسا کرتے ہیں، تو لوگوں کو ان کی باتوں پر قائم رہنا چاہیے۔"

یہ ویڈیو ایک ہفتے سے بھی کم وقت کے بعد سامنے آئی ہے جب ہیلی نے اپنے حریف ریپبلکن امیدوار وویک رامسوامی پر تنقید کی تھی کہ وہ تیسری ریپبلکن صدارتی مباحثے کے دوران اپنی بیٹی کے سوشل میڈیا کے استعمال کے بارے میں بات کر رہے تھے۔

یہ بیان اس وقت سامنے آیا جب یہ خبریں گردش کر رہی تھیں کہ ہیلی خود اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹس پر تخلص "نمرتا رندھاوا" استعمال کرتی ہیں۔

آخری بحث میں وویک نے کہا کہ "ہیلی نے اصل میں TikTok میں شامل ہونے پر میرا مذاق اڑایا، جب اس کی بیٹی پہلے ہی کافی عرصے سے ایپ استعمال کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آپ (ہیلی) کو پہلے اپنے خاندان کی تربیت کرنا چاہیے‘‘۔

ہیلی نے جواب دیا: "میری بیٹی کے بارے میں بات مت کرو، تم گندے ہو"۔

منگل کو ویڈیو میں ہیلی نے کہا کہ نام سے لوگوں کی تصدیق کرنے کے ان کے منصوبے کا مطلب امریکی حریفوں کے بوٹ اکاؤنٹس سے چھٹکارا حاصل کرنا ہے۔ تاکہ ہمیں پتا چلے کہ وہ کیا کہتے ہیں یا پوسٹ کرتے ہیں۔"

انہون نے کہ "ہم روسی بوٹس، ایرانی بوٹس، چینی بوٹس سے چھٹکارا حاصل کر لیں گے اور پھر ہم سوشل میڈیا کو کنٹرول کرنے کے قابل ہو جائیں گے، جب لوگوں کو معلوم ہو گا کہ ان کے نام ان کے کہنے یا پوسٹ کے آگے ظاہر ہوں گے"۔

مقبول خبریں اہم خبریں