فلسطین اسرائیل تنازع

جنوبی غزہ پر اسرائیلی بمباری فلسطینیوں کی غزہ سے بے دخلی کے لیے ہے: مصری ترجمان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصر نے ایک بار پھر اسرائیل کے بارے میں اپنے اس خدشے کا بالواسطہ اظہار کیا ہے کہ اسرائیل فلسطینیوں کو غزہ کی پٹی سے مکمل بے دخل کر کے بے وطن کرنے کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہے۔

منگل کے روز مصری وزارت خارجہ کے جنوبی غزہ میں مسلسل کی جانے والی اسرائیلی بمباری کو موضوع بناتے ہوئے کہا ' اس بمباری کا واضح اور صاف مطلب بے گھر ہو چکے فلسطینیوں کو نشانہ بنا کر غزہ کی پٹی سے ہی نکالنا ہے۔

ترجمان نے یہ بھی کہا ' مصر نے اعلان کیا ہے کہ اسرائیل کی جانب سے فلسطینیوں کی جبری بے دخلی کی ہر کوشش کو مسترد کرتا ہے۔

وزارت خارجہ کے ترجمان نے مصری موقف پر مبنی یہ بیان ' ایکس ' پر ایک پوسٹ کے ذریعے جاری کیا ہے۔ واضح رہے مصر اس سے قبل بھی متعدد بار کہہ چکا ہے کہ اسرائیل غزہ کے رہنے والے فلسطینیوں کو جبری طور پر بے گھر کرنے کے بعد انہیں جبری طور پر بے وطن کرنے کا ارادہ رکھتا ہے تاکہ فلسطینیوں کو غزہ کے جنوب میں رفح کے اس پار صحرائے سینا میں دھکیل دے۔

مصر کے اس موقف کی تائید جنوبی غزہ پر بڑھتی ہوئے اسرائیلی بمباری سے ہو رہی ہے۔ اسرائیل نے پہلے فلسطینیوں کو شمالی غزہ خالی کر کے جنوبی غزہ منتقل ہونے کا کہا۔ جب لاکھوں بے گھر فلسطینی جنوبی غزہ میں جمع ہو گئے تو جنوبی غزہ کو بھی بمباری کا نشانہ بنانا شروع کر دیاہے۔

ادھر اسرائیلی وزیر دفاع یواو گیلنٹ نے جنوبی غزہ میں اسرائیلی زمینی فوج اتارنے کا بھی عندیہ دیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں