مشرق وسطیٰ

شاہ سلمان امدادی مرکز کے ماہرین امدادی سامان کے ٹرالرز کے ہمراہ رفح کراسنگ پہنچ گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

غزہ میں انسانی ہمدردی کی بنیاد پر عارضی جنگ بندی پر فریقین میں ہونے والے معاہدے کے بعد رفح بارڈر پر شاہ سلمان امدادی مرکز کے 326 ٹرالرز پہنچ گئے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق مصر سے غزہ پٹی جانے والی سرحدی چوکی ’رفح‘ پر امدادی سامان کے ٹرالرز جمع ہونا شروع ہوگئے ہیں۔

باقاعدہ طور پرعارضی جنگ بندی کا اعلان ہوتے ہی امدادی سامان کی غزہ منتقلی کی کارروائی شروع کر دی جائے گی۔

امدادی سامان کے ٹرالرز غزہ کی سرحد پرموجود ہیں
امدادی سامان کے ٹرالرز غزہ کی سرحد پرموجود ہیں


شاہ سلمان مرکز برائے امداد کے نگران اعلی ڈاکٹر عبداللہ الربیعہ اور سینٹر کے دیگر اعلی عہدے دار بھی اس وقت رفح بارڈر پر موجود ہیں تاکہ امدادی سامان کی ترسیل کا آپریشن شروع کیا جا سکے۔

اس حوالے سے سعودی ہلال الاحمر اور فلسطینی ومصری امدادی ٹیمیں بھی بارڈر پرموجود ہیں جو جنگ بندی کے اعلان کی منتظر ہیں۔

دریں اثنا میڈیا کے ذریعے سامنے آنے والی اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ مصر میں موجود شاہ سلمان امدادی مرکز کے نمائندے مبارک الدوسری نے بتایا کہ امدادی سامان کے ٹرالرز غزہ کی سرحد پرموجود ہیں جو جنگ بندی کے اعلان کے منتظر ہیں جیسے ہی اس حوالے سے اعلان ہوتا ہے تمام سامان منظم طریقے سے غزہ کے متاثرین تک پہنچنا شروع ہو جائے گا۔

امدادی سامان کے ٹرالرز اور ایمبولنسز غزہ کی سرحد پرموجود ہیں
امدادی سامان کے ٹرالرز اور ایمبولنسز غزہ کی سرحد پرموجود ہیں

الدوسری نے مزید بتایا کہ شاہ سلمان امدادی مرکز کی جانب سے آنے والے امدادی سامان میں ادویات کے علاوہ ضروریات زندگی کی دیگر اشیا شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں