غزہ کے باشندوں کو دوسرے ملک منتقل کرنے کے مخالف ہیں: امریکی ایلچی

تنظیم حزب اللہ کشیدگی سے بچنا چاہتی تو اسرائیل پر راکٹ برسانا بند کردے: ڈیوڈ سیٹرفیلڈ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مشرق وسطیٰ میں انسانی امور کے لیے امریکہ کے خصوصی ایلچی ڈیوڈ سیٹر فیلڈ نے کہا ہے کہ امریکہ تباہ شدہ غزہ کی پٹی سے فلسطینیوں کو کسی دوسرے ملک منتقل کرنے کی مخالفت کرتا ہے۔

انہوں نے ایک ٹیلی ویژن انٹرویو میں مزید کہا کہ اسرائیلی فوجی کارروائیوں کی وجہ سے غزہ کی پٹی کے جنوب میں بے گھر ہونے والوں کو جلد سے جلد شمال میں اپنے گھروں کو واپس جانے کی اجازت دی جانی چاہیے۔ انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ اسرائیل کو اپنی مہم میں کامیاب دیکھنا چاہتا ہے۔

امریکی ایلچی ڈیوڈ سیٹر فیلڈ
امریکی ایلچی ڈیوڈ سیٹر فیلڈ

انہوں نے لبنانی تنظیم حزب اللہ کو خبردار کرتے ہوئے کہا کہ اگر وہ کشیدگی سے بچنا چاہتی ہے تو اسرائیل پر میزائل داغنا بند کردے۔ یہ بیان اسرائیل اور حماس کے درمیان قیدیوں کے تبادلے کے معاہدے کے اعلان اور غزہ کی پٹی میں ایک مدت کے لیے جنگ بندی کے نفاذ کے بعد سامنے آیا ہے۔

امریکی صدر جو بائیڈن نے اسرائیل اور حماس کے درمیان قیدیوں کے تبادلے کے معاہدے کا خیرمقدم کرتے ہوئے مصر اور قطر کی ثالثی کی کوششوں کو سراہا۔ بائیڈن نے اعلان کیا کہ وہ چار دن تک جاری رہنے والی جنگ بندی سے مکمل طور پر مطمئن ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اسرائیل اور حماس کے درمیان معاہدے کے تمام پہلوؤں کو مکمل طور پر نافذ کرنا ضروری ہے۔

بدھ کو اسرائیل نے 47 ویں روز بھی غزہ پر بمباری کی اور زمینی کارروائی کی۔ اس جنگ میں غزہ میں اب تک 14000 سے زیادہ فلسطینی شہید اور 33000 سے زیادہ زخمی ہو چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں