غزہ سے رفح اور پھر اسرائیل، قیدیوں کی نقل و حمل میں ریڈ کراس نے اپنا کردار بتا دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

غزہ کی پٹی میں چار روز کی جنگ بندی جمعہ سات بجے سے شروع ہو رہی ہے۔ حماس تحریک کے زیر حراست قیدیوں کے حوالے سے تکنیکی وجوہات کی بنا پر جنگ بندی کو ایک دن کے لیے ملتوی کیا گیا تھا۔ اب ریڈ کراس اور ہلال احمر یونین نے العربیہ سے گفتگو میں یرغمالیوں کی رہائی کے معاہدے میں ریڈ کراس کے کردار کی وضاحت کی ہے۔ ریڈ کراس نے بتایا کہ قیدیوں کو غزہ سے رفح کراسنگ اور پھر اسرائیل منتقل کیا جائے گا۔

بات چیت سے واقف ایک فلسطینی ذریعہ نے پہلے ہی انکشاف کیا تھا کہ 4 روزہ جنگ بندی کے نفاذ میں تاخیر کا تعلق آخری لمحات کی تفصیلات سے ہے۔ یہ تفصیلات اسرائیلی قیدیوں کے ناموں اور انہیں حوالے کرنے کے طریقہ کار سے متعلق تھیں۔

ذرائع نے بتایا کہ یرغمالیوں کو ریڈ کراس کے حوالے کیا جائے گا اور پھر انہیں تل ابیب پہنچانے کے لیے مصر منتقل کیا جائے گا جہاں اسرائیلی جیلوں میں موجود 150 فلسطینی خواتین کی رہائی کے بدلے میں حماس کے زیر حراست 50 خواتین اور بچوں کو رہا کیا جائے گا۔

شالیت کی رہائی سے ملتا جلتا طریقہ

یہ 2011 میں ہونے والے طریقہ کار سے ملتا جلتا طریقہ کار ہے۔ اس وقت ریڈ کراس کی بین الاقوامی کمیٹی نے اسرائیلی فوجی گیلاد شالیت کے ساتھ معاہدے میں ثالث کا کردار ادا کیا تھا۔ گیلاد شالیت کو حماس نے جون 2006 میں حراست میں لیا تھا۔

پیر کے روز بین الاقوامی کمیٹی کے صدر مرجانا سپولیجارک نے قطر میں حماس تحریک کے سیاسی بیورو کے سربراہ اسماعیل ھنیہ سے ملاقات کی۔ قطری حکام کے ساتھ ایک اور ملاقات بھی ہوئی جس میں بین الاقوامی سطح پر براہ راست بات چیت کی گئی۔ بین الاقوامی انسانی قانون کے احترام کی سطح کو بہتر بنانے کے لیے کمیٹی تمام فریقوں کے ساتھ مل کر کام کر رہی ہے۔

ہم فریق نہیں بنتے: ریڈ کراس

بین الاقوامی کمیٹی آف ریڈ کراس کی سرکاری ویب سائٹ کے مطابق یرغمالیوں کی تعریف یہ ہے کہ یہ ایسے افراد ہیں جو کسی شخص یا تنظیم کے ہاتھ لگ گئے ہوںاور وہ شخص یا تنظیم اپنے مطالبات پورے نہ ہونے کی صورت میں ان کو مار یا نقصان پہنچا سکتی ہو۔

سرکاری ویب سائٹ کے مطابق انٹرنیشنل کمیٹی آف دی ریڈ کراس کسی بھی جنگ میں کسی فریق کا ساتھ نہیں دیتی تاکہ فریقین کا اعتماد نہ کھو دے۔ اس اعتماد کے بغیر کام مکمل نہیں ہوسکتا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں