سعودی عرب کی سمندر اور فضائی راستے سے غزہ کے لیے امداد جاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کی طرف سے غزہ کے جنگ زدہ عوام کے لیے امدادی پل کے تحت سمندر اور فضا دونوں طرف سے امداد کی سپلائی کا سلسلہ جاری ہے۔

17 واں سعودی امدادی طیارہ غزہ کی پٹی کے لیے کل جمعہ کو امدادی سامان لے کر مصر کےشہر العریش کے ہوائی اڈے پر پہنچا۔

ایمبولینس اور سامان

امداد میں ایمبولینسز، طبی آلات اور عام استعمال کا سامان شامل ہیں۔

کنگ سلمان سینٹر نے "ایکس" میں اپنے اکاؤنٹ کے ذریعے بتایا کہ دو امدادی طیارے فلسطینی عوام کی مدد کے لیے پہنچے۔ یہ طیارے شاہ سلمان ریلیف سینٹر کی طرف سے بھیجےگئے تھے۔ 20 میں سے چار ایمبولینسیں غزہ کی پٹی کے اندر سے متاثرہ افراد تک پہنچانے کی تیاری کی جا رہی ہے۔

شاہ سلمان ریلیف سینٹر کے ترجمان ڈاکٹر سمر الجوتیلی نے کہا کہ فضائی پل اب غزہ کی پٹی تک امداد پہنچانے کے لیے کھلا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ سعودی امداد اس وقت تک جاری رہے گی جب تک تمام مطلوبہ انسانی ضروریات پوری نہیں ہو جاتیں۔

انہوں نے انکشاف کیا کہ 500 ٹن صحت، پناہ گاہ اور خوراک کی امداد ایئر پل کے ذریعے پہنچی۔

سمندری پل پر 1500 ٹن مختلف امداد پر مشتمل ایک جہاز امدادی سامان لے کر کل پہنچ جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں