غزہ کے لئے امدادی کام جاری، یو این ایجنسی اسرائیلیوں اور فلسطینیوں کی رہائی خوش شاداں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

محاصرہ زدہ غزہ کی پٹی کے شمالی حصے میں ادویہ، خوراک اور پانی سے متعلق امدادی سامان لے کر 61 ٹرک پہنچے ہیں۔ یہ بات اقوام متحدہ کے انسانی امور کوارڈی نیشن آفس 'اوچھا' کی طرف سے اسرائیل حماس جنگ بندی کے دوسرے روز کی امدادی سرگرمیوں کے سلسلے میں کہی گئی ہے۔

'اوچھا' کے مطابق علاوہ ازیں 200 ٹرکوں پر مشتمل سامان نتزانہ اسرائیل کے راستے غزہ بھجوایا گیا ہے۔ 'اوچھا' کی طرف سے جاری کیے گئے بیان میں بتایا گیا ہے۔ ان ٹرکوں کی کھیپ میں سے 187 ٹرک ہفتے کی شام تک غزہ بھجوائے جا چکے تھے۔ جن میں 'الشفاء ہسپتال' غزہ کے لیے گیارہ ایمبولینسز، تین کوچز، اور ایک فلیٹ بیڈ بھی شامل تھا۔ تاکہ ہسپتال سے مریضوں کا انخلا جلد سے جلد مکمل کر لیا جائے۔

واضح رہے پچھلے دنوں میں غزہ پر بمباری کے دوران غزہ کا یہ سب سے بڑا ہسپتال بھی کئی حوالوں سے بدترین صورت حال سے گذرا ہے۔

'او چھا' کے کوآرڈینیٹر نے جنگی وقفے کے حوالے سے کہا 'یہ جتنا لمبا ہو جائے گا اسی قدر انسانی بنیادوں پر امدادی سامان کی ترسیل زیادہ ممکن ہو سکے گی اور امدادی سامان کی فراہمی کرنے والے ادارے پوری غزہ کی پٹی پر مزید امدادی کام جاری رکھ سکیں گے۔ کوآرڈی نیٹر برائے او چھا نے اس موقع پر فلسطینی اور مصری ہلال احمر کا شکریہ ادا کیا کہ دونوں کی طرف سے اقوام متحدہ کے ساتھ بھر پور تعاون جاری ہے۔

خیال رہے جمعہ کے روز سے شروع ہونے والے چار روزہ اسرائیل حماس جنگی وقفے سے پہلے امدادی سامان کے ساتھ 137 ٹرک غزہ گئے تھے۔

'او چھا' کے کوآرڈی نیٹر نے اس موقع پر اسرائیلی یرغمالیوں کی رہائی پر خوشی کا اظہار کیا اور توقع ظاہر کی کہ اسی طرح مزید فلسطینی قیدی بھی رہا ہوں گے۔ تاکہ وہ بھی اپنے اہل خانہ اور پیاروں سے مل سکیں۔

اسرائیل اور حماس کی چار دن کے لئے جنگ بندی کے اعلان کے وقت اسرائیل کے پچاس یرغمالی اور اس کے مقابلے میں ایک سو پچاس فلسطینی قیدی رہا کرنے پر اتفاق کیا گیا تھا۔ تاہم جنگ بندی میں توسیع کے نتیجے میں مزید اسرائیلیوں اور فلسطینیوں کی رہائی ہو سکے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں