امریکہ میں اسرائیلی قونصل خانے کے باہر ایک شخص کی خودسوزی کی کوشش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطینیوں کے خلاف اسرائیلی بمباری اور غزہ میں اب تک پندرہ ہزار سے زائد کی تعداد کو چھو چکی ہلاکتوں کے خلاف امریکی شہر اٹلانٹا میں غیر معمولی احتجاجی منظر سامنے آیا ہے۔ اٹلانٹا میں اسرائیلی قونصل خانے کے باہر احتجاجاً ایک شہری نے خود کو آگ لگا لی۔

اسرائیلی بمباری کے خلاف خود سوزی کی کوشش کرنے والے شہری کی حالت نازک بتائی گئی ہے۔ اس دوران خود کو آگ لگانے والے کو بچانے کے لیے آگے بڑھنے والا ایک سکیورٹی گارڈ بھی اس دوران زخمی ہو گیا ہے۔

پولیس چیف نے ایک نیوز کانفرنس میں خود سوزی کی کوشش کرنے والے کے بارے میں بتایا ہے کہ اس کی شناخت نہیں ہو سکی ہے۔ تاہم اس کی حالت نازک ہے۔ پولیس حکام کے مطابق اسے بچانے کے لیے آگے بڑھنے والے زخمی کے بارے میں کچھ معلومات نہیں ہیں کہ اس کی حالت کیسی ہے۔

پولیس حکام نے اپنی نیوز کانفرنس میں اس بارے میں کچھ نہیں بتایا ہے کہ اسرائیلی قونصل خانے کے باہر سکیورٹی اہلکاروں کی موجودگی میں خود سوزی کی کوشش کرنے والے کو ایسا موقع کیسے مل گیا۔

پولیس کے سربراہ نے کہا البتہ قونصل خانے کی عمارت مکمل محفوط ہے اور اس کے لیے کوئی خطرے والی بات نہیں۔ پولیس سربراہ کا کہنا ہے کہ یہ انتہائی سیاسی اقدام تھا۔

خؤد سوزی کرنے والا شخص بارہ بج کر سترہ منٹ پر قونصل خانے کی بلڈنگ کے باہر پہنچا۔ اس بلڈنگ میں قونصل خانے کے علاوہ اور بھی کئی کاروباری دفاتر ہیں۔

فیڈرل بیورو آف انوسٹی گیشن (ایف بی آئی) نے بتایا کہ وہ مقامی قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ساتھ رابطے میں ہیں۔ تاہم واشنگٹن میں موجود اسرائیل کے سفارت خانے اور اٹلانٹا میں موجود قونصل خانے کے حکام نے اس معاملے پر کسی بھی قسم کے فوری تبصرے سے انکار کیا ہے۔

واضح رہے اسرائیل نے جنگ بندی کے مختصر وقفوں کے بعد جمعہ کے روز غزہ پر دوبارہ بمباری کی ہے اور 178 فلسطینیوں کو ہلاک کر دیا ہے۔ اسرائیل کی بمباری کے خلاف دنیا کے کئی شہروں میں احتجاج ہو رہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں