امریکی پابندی، فلسطینی وزیر خارجہ میڈیا سے بات نہیں کر سکتے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے بتایا ہے کہ امریکی جو بائیڈن انتطامیہ نے فلسطینی اتھارٹی کے وزیر خارجہ پر ایسی قدغنیں لگادی ہیں کہ وہ میڈیا سے بات نہ کر سکیں۔

فلسطینی وزیر خارجہ ریاض المالکی عرب وزرائے خارجہ کے وفد کے ساتھ ان دنوں امریکی دورے پر ہیں۔ شہزادہ فیصل بن فرحان نے ریاض المالکی پر امریکی پابندی کا ذکر جمعہ کے روز اسی دوران کیا ہے۔

فیصل بن فرحان نے امریکہ میں وزرائے خارجہ کی موجودگی میں نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا 'جناب وزیر خارجہ کو امریکی انتظامیہ نے کچھ ایسی پابندیوں کے نیچے رکھا ہے، جن کی وجہ سے یہ میڈیا کے سوالوں کے جواب نہیں دے سکتے ہیں۔ کیونکہ انہیں میڈیا سے بات کرنے کا حق نہیں ہے۔'

سعودی وزیر خارجہ جو عرب وزرائے خارجہ کے وفد کی قیادت کر رہے ہیں تاکہ غزہ کی جنگ ختم کرانے کے لیے کوششیں کر سکیں اور غزہ فلسطینیوں کو کچھ امدادی سامان کی فراہم کے لیے قائل کر سکیں، انہوں نے نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مزید کہا 'اگر فلسطینی وزیر خارجہ امریکہ میں میڈیا سے بات کریں گے تو کچھ قانونی مضمرات ہو سکتے ہیں'

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں