سلامتی کونسل: جنگ بندی قرار داد کے حق میں روسی ووٹ پر نیتن یاہوکا اظہار پریشانی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیلی وزیر اعظم نیتن یاہو نے روس کی طرف سے غزہ کی جنگ بندی کے حق میں ووٹ دینے پر صدر ولادی میر پوتن کے بارے میں عدم اطمینان کا ظاہر کیا ہے۔ سلامتی کونسل میں قرارداد پر ہفتے کے روز ووٹنگ کے دوران پندرہ ووٹوں میں سے تیرہ ووٹ قرار داد کے حق میں آئے تھے۔ جن میں سے ایک ووٹ روس کا بھی تھا۔

تاہم غزہ میں اسرائیلی جنگ میں اسرائیل کی کھلی حمایت اور مدد کرنےوالے امریکہ نے سلامتی کونسل میں بھی اسرائیل کی مدد کرتے ہوئے ویٹو کا حق استعمال کرتے ہوئے یہ قرار داد ناکام بنا دی۔

اتوار کے روز اسرائیلی وزیر اعظم کے دفتر سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے وزیر اعظم کو اسرائیل کے خلاف مختلف فورمز پر روسی موقف پرعدم اطمینان ہے۔ نیتن یاہو نے اس بارے میں صدر پوتن سے فون پر بات کرکے انہیں اپنی رائے سے آگاہ کیا ہے۔
نیتن یا ہو نےروسی صدر سے کہا ' مختلف فورمز پر روسی نمائندوں کا موقف قابل تشویش رہا ہے۔ کوئی بھی ملک جس پر دہشت گردانہ حملے ہوئے ہوں اس نے رد عمل میں اسرائیل سے کم طاقت استعمال نہ کی ہو گی۔ '

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں