آسٹریا :مبینہ طورپرویانا کی عبادت گاہ پرحملے کامنصوبہ بنانے والا 16سالہ نوجوان گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

آسٹریا کے اعلیٰ سیکورٹی اہلکار نے پیر کو بتایا کہ ایک 16 سالہ نوجوان کو ویانا میں ایک عبادت گاہ پر حملہ کرنے کی مبینہ منصوبہ بندی کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔

وزیرِ داخلہ گیرہارڈ کارنر نے کہا کہ جمعرات کو گرفتار ہونے والے نوجوان نے آن لائن چیٹس میں اعلان کیا تھا کہ وہ ویانا میں ایک غیر متعینہ عبادت گاہ پر حملہ کرنے کے لیے ہتھیار حاصل کرنے کا ارادہ رکھتا تھا۔

آسٹریا کی خبر رساں ایجنسی اے پی اے نے رپورٹ کیا کہ اس نے حملے کے لیے مالی وسائل پہلے ہی حاصل کر لیے تھے۔

حکام نے مشتبہ شخص کی شناخت نہیں کی۔ ان نے کہا کہ وہ شمالی آسٹریا میں سٹیر کے قریب رہتا تھا۔

اے پی اے نے رپورٹ کیا کہ اس کے گھر کی تلاشی لی گئی اور کئی الیکٹرانک ڈیٹا کیریئر ضبط کر لیے گئے۔

اے پی اے نے کہا کہ حکام کو بم، ہتھیار اور گولہ بارود بنانے کی ہدایات پر مبنی تصاویر اور ویڈیو مواد بھی ملا ہے۔

آسٹریا کے حکام نے اسرائیل اور حماس کی جنگ کے تناظر میں سام دشمنی کے واقعات میں اضافے کے بعد یہودی عبادت گاہوں اور دیگر یہودی اور اسرائیلی اداروں کے لیے سیکورٹی بڑھا دی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں