مصری شہری جنسی طاقت کی ادویات پر کروڑوں ڈالر کیوں خرچ کررہے ہیں؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

مصرمیں میڈیسن مارکیٹ کے اعدادو شمار جمع کرنے والی تنظیم ’آئی کیو ویا‘ کی طرف سے جاری کردہ اعدادوشمار مطابق، ستمبر 2022 سے ستمبر 2023 کے عرصے کے دوران جنسی طاقت کی ادویات پر پرمصری اخراجات کا حجم تقریباً نصف ارب پاؤنڈ یعنی 16 ملین ڈالر تک پہنچ گیا ہے۔

ان اعداد و شمار کی ایک نقل ’العربیہ بزنس‘ نے حاصل کی ہے جن میں بتایا گیا ہے کہ مصر میں سب سے زیادہ فروخت ہونے والی جنسی محرک کی مصری کھپت مذکورہ مدت کے دوران تقریباً 6.9 ملین یونٹس تھی۔

مصری مارکیٹ میں مصنوعات کی بہت زیادہ کھپت کے باوجو اعداد و شمار نے مذکورہ مدت کے دوران فروخت ہونے والی یونٹس کی تعداد میں 23 فیصد سے زیادہ کمی کا انکشاف کیا ہے۔ اس کے علاوہ اس کی فروخت کی قدر میں 4.3 فیصد کی کمی واقع ہوئی ہے۔

ایرک کی فروخت کی قدر میں نمایاں کمی گزشتہ مہینوں میں اس کی قیمت میں 25 فی صد اضافے کی وجہ سے ہوسکتی ہے۔

محرک مصری کمپنی "ادویا" کی طرف سے تیار کیا گیا ہے جس کی ملکیت ایک سرمایہ کاری کنسورشیم ہے جس میں یورپی بینک برائے تعمیر نو اور ترقی (EBRD) اور یونائیٹڈ کنگڈم امپیکٹ انویسٹنگ اینڈ ڈیولپمنٹ فنانس کارپوریشن (CDC) شامل ہیں۔

ستمبر 2022 سے ستمبر 2023ء کے عرصے کے دوران مصریوں کی فارمیسیوں کے ذریعے فروخت ہونے والی دوائیوں کی خریداری 142.7 بلین پاؤنڈ رہی، جو پچھلے سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 18 فیصد زیادہ ہے، جب کہ دواؤں کی فروخت کی جانے والی اکائیوں میں 8 کمی واقع ہوئی ہے۔

دوسری جانب ازدواجی تعلقات اورجنسی امراض کی مشیر ڈاکٹر ہبہ قطب نے العربیہ بزنس کو بتایا کہ مصر میں ایرک کے محرک کے استعمال کی کئی وجوہات ہیں، جن میں سب سے اہم جنسی محرک ویاگرا کے مقابلے میں اس کی کم قیمت ہے۔

قطب نے کہا کہ "دوسری وجہ یہ ہے کہ جنسی علاج عام طور پر مہنگا ہوتا ہے۔ اگر کوئی ایسا شخص ہے جسے کوئی مسئلہ ہے اور اسے علاج کی ضرورت ہے تو وہ اس طرح کے جنسی محرک کو ایک مناسب متبادل تلاش کرے گا، چاہے صرف عارضی حل ہی کیوں نہ ہو۔

"تیسری وجہ اس حقیقت سے متعلق ہے کہ یہ دوائیں نسخے کے مطابق فروخت نہیں کی جاتی ہیں۔ دوائیوں پر قابو نہ ہونے کی صورت میں لوگ انہیں حاصل کر سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مصر میں قوت باہ کی ادویات کا استعمال معمول بن گیا ہے۔ ادویات، نہ صرف ازدواجی تعلقات کے دوران بلکہ ان کا استعمال مجموعی جنسی طاقت اور خون کی گردش کو بہتر بنانے کے لیے بھی کیا جاتا ہے"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں