اسرائیل نے غزہ کی راہداری ’’کرم ابو سالم‘‘ کھولنے کی اجازت دیدی، واشنگٹن کا خیر مقدم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

وائٹ ہاؤس کے قومی سلامتی کے مشیر جیک سلیوان نے جمعہ کو اسرائیل کے دورے کے بعد ایک بیان میں کہا کہ امریکہ غزہ کے ساتھ کریم ابو سالم راہداری کو انسانی امداد کے لیے کھولنے کے اسرائیل کے فیصلے کا خیر مقدم کرتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ مجھے اسرائیل چھوڑنے سے پہلے اس فیصلے سے آگاہ کر دیا گیا تھا۔

اسرائیلی وزیر اعظم کے دفتر نے جمعہ کو اعلان کیا کہ اسرائیل نے امداد کو راہداری ’’ کرم ابوسالم‘‘کے ذریعے غزہ کی پٹی میں داخل ہونے کی اجازت دینے پر اتفاق کیا ہے۔ بیان میں کہا گیا کہ کراسنگ کھولنے سے روزانہ 200 امدادی ٹرکوں کے داخلے کی اجازت دی جائے گی۔

7 اکتوبر کو حماس کے حملے کے بعد کراسنگ کو بند کر دیا گیا تھا۔ مصر کے ساتھ غزہ کی رفح کراسنگ کے ذریعے ہی امداد پہنچائی جا رہی ہے۔ اسرائیل کا کہنا ہے کہ رفح کراسنگ سے روزانہ صرف 100 ٹرک داخلے کی سہولت فراہم کی جارہی ہے۔ اس قدم کا مقصد اس شعبے میں داخل ہونے والے مواد کی مقدار کو بڑھانا ہے۔ اقوام متحدہ اسے مکمل طور پر ناکافی سمجھتی ہے۔

رفح کراسنگ اس وقت غزہ کی پٹی کے لیے انسانی امداد کے لیے کھلی ہوئی واحد کراسنگ ہے جہاں کے رہائشی تباہ کن حالات زندگی کا شکار ہیں۔

جمعہ کے روز عالمی ادارہ صحت نے کرم ابو سالم کراسنگ کو کھولنے کے فیصلے کا خیرمقدم کیا لیکن کہا کہ اس بات کو یقینی بنانے کے لیے ابھی بھی کام کی ضرورت ہے کہ ضروری طبی سامان ان ہسپتالوں تک پہنچ جائے جنھیں پوری پٹی میں ان کی اشد ضرورت ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں