کرم ابوسالم کراسنگ کے ذریعے غزہ میں کوئی امداد نہیں پہنچی: مصری سکیورٹی عہدیدار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

غزہ کی پٹی میں کرم ابو سالم راہداری سے امدادی سامان سے لدے ٹرکوں کے داخلے کے آغاز کے اعلان کے بعد اتوار کو مصری ہلال احمر کے ایک عہدیدار نے ان اطلاعات کی تردید کردی اور کہا ہے کہ کرم ابوسالم کراسنگ کے ذریعے غزہ میں کوئی امداد نہیں پہنچی ہے۔ اس سے قبل دو ماہ میں پہلی مرتبہ کرم ابو سالم کے ذریعہ غزہ میں امداد بھیجنے کی بات سامنے آئی تھی۔

اتوار کے روز مصر کے ایک سرکاری سیکورٹی ذرائع نے ان خبروں کی تردید کردی کہ انسانی امداد کے ٹرک مصر، اسرائیل اور غزہ کے درمیان کرم ابو سالم سرحدی گزرگاہ کے ذریعے غزہ کی پٹی میں داخل ہونا شروع ہو گئے ہیں۔

ذرائع نے عرب ورلڈ نیوز ایجنسی کو بتایا کہ کرم ابو سالم گزرگاہ سے اتوار کی شام تک کوئی امدادی ٹرک غزہ نہیں گیا ہے۔ تمام امداد بدستور رفح کراسنگ سے ہی گزر رہی ہے۔

ذرائع نے مزید کہا کہ اب تک کرم ابو سالم گزرگاہ کو اسرائیل کی طرف سے امدادی ٹرکوں کا معائنہ کرنے کے لیے استعمال کیا جا رہا ہے اور پھر ٹرک مصر اور غزہ کی پٹی کے درمیان رفح سرحدی گزرگاہ سے داخل ہونے کے لیے واپس لوٹ جاتے ہیں۔

شمالی سینا میں مصری ہلال احمر کے سربراہ خالد زاید نے عرب ورلڈ نیوز ایجنسی کو تصدیق کی کہ انسانی اور طبی امداد کے تقریباً 100 ٹرک آج رفح گزرگاہ کے ذریعے غزہ میں داخل ہوئے اور کرم ابو سالم گزرگاہ سے کوئی امداد غزہ میں داخل نہیں ہوئی۔

یہ بیان اسرائیل کی جانب سے اس بات کی تصدیق کے بعد سامنے آیا ہے کہ 17 دسمبر سے اقوام متحدہ کے امدادی ٹرکوں کی حفاظتی جانچ پڑتال کی جائے گی اور انہیں کرم ابو سالم سرحدی گزرگاہ کے ذریعے براہ راست غزہ پہنچایا جائے گا۔

تاہم اب معلوم ہو رہا ہے کہ اسرائیل کا یہ دعویٰ صرف دعویٰ ہی تھا اور عملی طور پر غزہ میں کوئی امداد کرم ابو سالم گزرگاہ سے داخل نہیں ہوسکی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں