روس عرب وزراء کا 'میری ٹائم ٹریفک' محفوظ رکھنے کے لیے ضمانتوں پر زور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

روس اور عرب وزراء کے مشترکہ فورم نے بدھ کے روز اس امر پر زور دیا ہے کہ خلیج اور بحیرہ احمر میں سمندری ٹریفک کو محفوظ رکھنے کی گارنٹیاں دی جائیں۔ یہ مطالبہ وزراء کے مشترکہ فورم نے اپنے اعلامیے میں کیا ہے۔

وزراء کے اس فورم نے سمندروں میں جہازوں کے تحفظ، توانائی کی ترسیل اور تیل کی پائپ لائنز کے خلاف اقدامات کی مذمت کی۔ اجلاس مراکیچ میں بدھ کے روز منعقد کیا گیا ہے۔

اجلاس میں اسرائیل کی طرف سے جاری جارحانہ جنگ کی بھی بھر پور مذمت کی گئی۔ نیز مشترکہ اعلامیے میں اسرائیلی جنگ کے دفاعی حق کے دعوے کو مسترد کر دیا گیا۔ روسی وزیر خارجہ سرگئی لاروف روسی نمائندے کے طور پر اجلاس میں شریک ہوئے۔

اجلاس نے توقع ظاہر کی کہ سلامتی کونسل غزہ میں جنگ بندی کے لیے قراداد منظور کرے گی۔ واضح رہے یہ قرا داد سلامتی کونسل میں پیر کے روز سے ووٹنگ کے التواء کا شکار ہے۔ تاکہ ارکان ایک متفقہ مسودے پر اتفاق پر راضی ہو سکیں۔ اس وجہ سے پیر اور منگل کے دنوں میں ووٹنگ ملتوی کی جاتی رہی۔

روسی وزیر خارجہ نے اس موقع پر کہا ' ہمیں امید ہے کہ سلامتی کونسل جنگ بندی کے لیے اپنی آواز بلند کر سکے گی۔ ہمارا اقوام متحدہ کے ساتھ 'کوآرڈی نیشن' پر اتفاق ہے۔'

روس اور عرب وزراء کا یہ مشترکہ فورم عام طور پر تجارتی امور پر ہی بات کرتا ہے لیکن اس کے بدھ کے روز ہونے والے اجلاس میں غزہ کی صورت حال پر سب سے زیادہ بات چیت کی گئی ہے۔ فورم کے اجلاس کی صدارت مراکش کے وزیر خارجہ ناصر بوریتا نے کی ہے۔ جبکہ روس کے علاوہ عرب لیگ کے نمائندوں نے بھی شرکت کی۔

عرب لیگ کے سیکرٹری جنرل نے اپنے خطاب میں کہا ' ہمیں امید ہے کہ سلامتی کونسل جنگ بندی کی قرار داد منور کر لے گی اور اور اسے کوئی مستقل ممبر ویٹو نہیں کرے گا، خاص طور پر امریکہ کی طرف سے اب ویٹو نہیں کیا جائے گا۔'

مقبول خبریں اہم خبریں