یونان کا بحیرۂ احمر میں جہاز رانی کے تحفظ کے لیے بحری اتحاد میں شمولیت کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یونان کے وزیرِ دفاع نے جمعرات کو کہا کہ یونان بحیرۂ احمر کی عالمی جہاز رانی لین کو یمن کی حوثی ملیشیا سے بچانے کے لیے امریکہ کے زیرِ قیادت بحری اتحاد میں شامل ہوگا۔

وزیرِ دفاع نیکوس ڈینڈیاس نے کہا کہ یونانی بحریہ کا ایک فریگیٹ وزیرِ اعظم کریاکوس میتسوتاکیس کے حکم پر ٹاسک فورس میں شامل ہوگا۔

ڈینڈیاس نے ایک ٹیلیویژن بیان میں کہا کہ جہازرانی کے ایک اولین اور بہترین ملک کے طور پر عالمی سمندری نقل و حمل کے لیے ایک "بڑے خطرے" سے نمٹنے میں یونان کی "بنیادی دلچسپی" تھی۔

پیر کو امریکی وزیرِ دفاع لائیڈ آسٹن کی جانب سے اعلان کردہ ٹاسک فورس میں ابتدائی طور پر برطانیہ، بحرین، کینیڈا، فرانس، اٹلی، ہالینڈ، ناروے، سیشلز اور اسپین شامل تھے۔

ایرانی حمایت یافتہ حوثی باغی کہتے ہیں کہ کنٹینر بحری جہازوں پر ان کے میزائل اور ڈرون حملے 7 اکتوبر سے اسرائیل اور حماس کے درمیان جاری غزہ جنگ میں فلسطینیوں کی حمایت میں ہیں۔

نہر سویز جو عالمی تجارت کے تقریباً 10 فیصد کی ایک چوکی ہے، کی طرف جانے والے پانیوں میں ہونے والے حملوں نے کئی جہاز راں کمپنیوں کو اپنے جہازوں کا رخ موڑنے پر مجبور کر دیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں