نئی دہلی میں اسرائیلی سفارت خانے کے قریب دھماکہ: ترجمان سفارت خانہ

ہندوستان ٹائمز کے مطابق نئی دہلی کے فائر ڈیپارٹمنٹ کو فون کال موصول ہوئی جس میں دھماکے کی اطلاع دی گئی ہے تاہم پولیس دھماکے کی جگہ کا تعین کر رہی ہے۔

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

انڈیا کے دارالحکومت نئی دہلی میں سفارت خانے نے فائر بریگیڈ ڈیپارٹمنٹ کو فون کال کر کے اطلاع دی ہے کہ سفارت خانے کے نزدیک دھماکہ ہوا ہے۔ تاہم ابتدائی اطلاعات کے مطابق اس جائے دھماکہ کی تلاش کی جا رہی تھی۔ پولیس بھی اس جگہ کا تعین کرنے کی کوشش کر رہی تھی۔

دوسری جانب اسرائیلی سفارتخانے کے ترجمان نے ہی رائیٹرز سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم تصدیق کر سکتے ہیں کہ اسرائیلی سفارت خانے کے نزدیک دھماکہ ہوا ہے۔ دھماکے کی خبر بھی اسرائیلی سفارت خانے نے خود دی ہے اور اس کی تصدیق بھی خود اسی کا ترجمان کر رہا ہے۔

ذرائع کے مطابق اہم بات ہے کہ اسرائیل جو کہ غزہ میں سات اکتوبر سے مسلسل بمباری کے بعد پوری دنیا میں عوامی احتجاج کا سامنا کر رہا ہے اس کے سفارت خانے کے نزدیک جنوبی ایشیا کے سب سے بڑے دوست ملک بھارت نے اس کی سکیورٹی کا ایسا کیا بندوبست کیا ہے کہ سفارت خانے کو دھماکے کے بعد فائر بریگیڈ کو بھی خود فون کر کے بتانا پڑا ہے۔
مبصرین اس پر بھی سوال اٹھا رہے ہیں کہ کیا وجہ ہے کہ دھماکہ اسرائیلی سفارت خانے کے نزدیک یا جہاں بھی ہوا اس کی اطلاع صرف فائر بریگیڈ کو ہی کیوں دی گئی اور صرف اسرائیلی سفارت خانے نے ہی کیوں دی گئی۔ اس کی حفاظت پر مامور بھارتی سکیورٹی ادارے کہاں تھے اور دھماکے کے بعد 'ریسکیو' والوں کو فوری طور پر کوئی کال گئی یا نہیں۔ دھماکے کی آواز قریبی عمارات کو سنائی نہیں دی ہے؟

نیز یہ کہ اس بارے میں بھارت کی وزارت داخلہ اور بھارتی وزارت خارجہ کا موقف تاخیر کا شکار کیوں ہوا ہے؟ کیا یہ دھماکہ صرف اسرائیلی سفارت خانے کے اندر سنا گیا، اگرچہ یہ سفارت خانے کے قریب ہوا، اندر نہیں ہوا۔ لیکن پھر بھی کوئی دوسرا کیوں دھماکے کی آواز نہ سن سکا۔

واضح رہے کہ اسرائیلی سفارت خانے کے نزدیک دھماکے کا وقت بھارتی وقت کے مطابق پانچ بج کر بیس منٹ بتایا گیا ہے۔ اس کے باوجود سفارت خانے نے صرف فائر بریگیڈ کو ہی کیوں ضروری خیال کیا کسی اور ادارے کو کیوں اطلاع سے محروم رکھا گیا؟ کیونکہ ہندوستان ٹائمز نے بھی اس خبر کی اشاعت کے لیے بھی اسی فون کال کو بنیاد بنایا ہے جو اسرائیلی سفارتخانے سے فائر بریگیڈ کو آگ بجھانے کے لیے کی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں