اپنا رسوخ جتلانے کیلئے ایران فلسطینیوں کا خون بطور کارڈ استعمال کر رہا: تحریک فتح

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

تحریک فتح کی انقلابی کونسل کے رکن محمد الحورانی نے کہا ہے کہ ایران اپنا اثر و رسوخ ظاہر کرنے کے لیے فلسطینیوں کے خون کو ایک کارڈ کے طور پر استعمال کر رہا ہے۔ انہوں نے بدھ کے روز العربیہ کو دیے گئے بیانات میں مزید کہا کہ عرب نوجوانوں کا ایک حصہ ایرانی نعروں سے دھوکا کھا گیا ہے۔ انہیں اس خطرے کا احساس کرنا چاہیے۔

محمد الحورانی نے مزید کہا کہ حماس ایک فلسطینی تنظیم ہے۔ ہمیں امید ہے کہ وہ استحصالی علاقائی اتحاد کو ترک کر دے گی۔

ایرانی بیانات

الحوریانی کا یہ بیان ایرانی پاسداران انقلاب کے ترجمان رمضان شریف کے اعلان کے بعد سامنے آیا ہے کہ حماس کی طرف سے "طوفان الاقصیٰ" آپریشن تین سال قبل پاسداران انقلاب میں قدس فورس کے کمانڈر قاسم سلیمانی کے قتل کے ردعمل میں کیا گیا ہے۔ حماس نے ایران کے اس دعوے کی تردید کردی ہے۔

الحورانی نے بدھ کو پریس کانفرنس میں مزید کہا کہ 7 اکتوبر کے واقعات قاسم سلیمانی کے قتل کی انتقامی کارروائیوں میں سے ایک تھے۔ پاسداران انقلاب کے ترجمان نے تل ابیب کو جنرل رضی موسوی کے قتل کے جواب میں اسی طرح کے حملے سے بھی خبردار کیا۔

حماس کی تردید

دوسری طرف حماس نے بدھ کو ایک بیان میں وضاحت کی ہے کہ اس نے متعدد مرتبہ آپریشن ’’ طوفان الاقصیٰ‘‘ کے محرکات اور وجوہ کو بیان کیا ہے۔ یہ آپریشن مسجد اقصیٰ کو لاحق خطرات کے تناظر میں کیا گیا ہے۔

حماس کے بہ قول تمام فلسطینی مزاحمتی کارروائیاں اسرائیل کی موجودگی اور ہمارے لوگوں کے خلاف اس کی مسلسل جارحیت کے جواب میں کی جاتی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں