امریکی خاتون جوڈتھ وائنسٹائن کو حماس نے 7 اکتوبر کو قتل کر دیا : بائیڈن

اسرائیل میں نیر اوز کمیونٹی نے 7 اکتوبر کے حملے میں زخمی وائنسٹائن کی موت کا اعلان کیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی صدر جو بائیڈن نے کہا ہے کہ امریکی خاتون جوڈتھ وائنسٹائن جس کے بارے میں خیال کیا جارہا تھا کہ اسے حماس نے یرغمال بنا لیا ہے سات اکتوبر کے حماس کے حملے میں ماری گئی ہیں۔ اس خبر نے مجھے صدمہ پہنچایا ہے۔

یاد رہے بائیڈن نے گزشتہ ہفتے کہا تھا کہ جوڈتھ وائنسٹائن ہاگئی کے شوہر گڈی ہاگئی کو بھی اسی دن قتل کر دیا گیا تھا۔

جمعرات کو جنوبی اسرائیل میں نیر اوز کمیونٹی نے ایک اسرائیلی نژاد امریکی خاتون کی موت کا اعلان کیا تھا جو اپنے شوہر کے قتل کے اعلان کے کئی دن بعد 7 اکتوبر کو حماس کے حملے کے بعد سے یرغمال تھی۔

گروپ نے ایک بیان میں کہا کہ جوڈتھ وائنسٹائن ہاگئی 7 اکتوبر کے حملے کے دوران زخمی ہوئی تھی اور اب ان کی موت کا اعلان کرنے کی اجازت دی گئی ہے۔ وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسیں۔

وائن سٹائن ہاگئی کو غزہ کی پٹی میں حماس کے زیر حراست سب سے معمر خاتون سمجھا جاتا ہے کیونکہ ان کی عمر 70 سال ہے۔ وہ چار بچوں کی ماں اور سات کی دادی یا نانی تھیں۔ وہ ارتکاز کے مسائل کا شکار افراد اور دیگر معذور افراد کے لیے انگلش کی ٹیچر رہی تھیں۔

انہیں اپنے 73 سال کے شوہر کے ساتھ اغوا کیا گیا تھا۔ ان دونوں کی لاشیں اب بھی غزہ میں ہی موجود ہیں۔

ان کے بیٹے آل ہگائی نے اس ماہ اے ایف پی کو ایک انٹرویو میں کہا کہ میں یقین کرنا چاہتا ہوں کہ وہ ابھی تک زندہ ہے لیکن مجھے یقین نہیں ہے۔

امریکی صدر نے اپنے ایک سابق بیان میں کہا تھا کہ انہیں اس خبر سے دکھ ہوا ہے کہ امریکی گڈ ہاگئی کے بارے میں اب خیال کیا جا رہا ہے کہ حماس نے انہیں 7 اکتوبر کو مار دیا ہے۔

حماس نے سات اکتوبر کو حملہ کرکے 1140 اسرائیلیوں کو قتل اور 240 کو یرغمال بنایا تھا۔ اسی دن سے اسرائیل نے غزہ پر چڑھائی کردی تھی اور ریاستی دہشتگردی کرتے ہوئے 83 دنویں میں 21320 فلسطینیوں کو شہید کردیا ہے۔۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں