مصرمیں 18 سال سےکم عمر افراد کے اکیلے سفر کی مشروط اجازت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصری حکام نے 18 سال سے کم عمر کے نابالغوں کو یکم جنوری 2024ء سے مصر سے باہر سفر کرنے سے روکنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اٹھارہ سال سے کم عمر افراد صرف اپنے قریبی عزیزوں کے ساتھ ہی بیرون ملک کا سفر کرسکتے ہیں، تاہم اگر وہ اکیلے سفر کررہے ہیں تو انہیں محکمہ مواصلات پاسپورٹ، امیگریشن اور جنرل ایڈمنسٹریشن برائے نیشنلٹی سے پیشگی اجازت لینا ہوگی۔

حکام نے فیصلےکی نقل EgyptAir ہولڈنگ کمپنی اور باقی متعلقہ حکام کو یکم جنوری 2024ء سے پہلے کے فیصلے پر عمل درآمد کے لیے بھیج دیا ہے۔ بشرطیکہ 18 سال سے کم عمر کے نابالغوں کو مصر سے باہر کسی دوسری منزل پر جانے کی اجازت نہیں ہوگی البتہ وہ اپنے خاندان کے افراد کے ساتھ سفر کر سکتے ہیں۔

تاہم کھیلوں کی ٹیمیں جنہوں نے وزارتِ نوجوانان اور کھیل سے اجازت لے رکھی ہے وہ عرب جمہوریہ مصر سے باہر سفر کرسکتی ہیں۔

جاری کردہ فیصلے میں اشارہ کیا گیا ہے کہ اگر 18 سال سے کم عمر کا کوئی نابالغ تنہا سفر کرتا ہے تو اسے پاسپورٹ، امیگریشن اور نیشنلٹی کے جنرل ایڈمنسٹریشن کے کمیونیکیشن ڈیپارٹمنٹ سے پیشگی اجازت لینا ہوگی۔

نابالغ بچوں کے سفر پر پابندی کے فیصلے کے متن میں 1997ء کی جنرل ہدایات نمبر 1 کے علاوہ فضائی، سمندری اور زمینی بندرگاہوں پر کام کی تنظیم اور اس کے بعد کی ہدایات کے علاوہ 18 سال سے کم عمرافراد کے سفر کی شرائط کا انکشاف کیا گیا ہے۔

• 18 سال سے کم عمر کے نابالغ کو ملک سے باہر کسی سرپرست کے بغیر کسی منزل تک جانے کی اجازت نہیں ہوگی۔

• اگر وہ اکیلا سفر کرتا ہے تو اسے پاسپورٹ، امیگریشن اور نیشنلٹی کے جنرل ایڈمنسٹریشن کے رابطہ دفتر سے اجازت حاصل کرنا ہوگی۔

• اجازت نامہ حاصل کرنے کے لیے متعلقہ فرد کا موجود ہونا ضروری ہے۔ اس کے سرپرست کے ساتھ رابطہ، مواصلت کا انتظام کرنے کے لیے اور نابالغ کے اکیلے سفر کرنے کے لیے سرپرست کی منظوری کا اعتراف لینا ہوگا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں