ایران میں منشیات کے دھندے میں ملوث 9 افراد کو پھانسی پر لٹکا دیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

ایران میں حالیہ چند دنوں کے دوران منشیات کے دھندے میں ملوث 9 افراد کو پھانسی دی گئی ہے۔ اسی ہفتے کے دوران اسرائیل کے لیے چار جاسوسی کرنے والے ایرانی شہریوں کو بھی پھانسی دی گئی ہے۔ ایران اس وقت دنیا میں جرائم پیشہ افراد کو زیادہ پھانسیاں دینے والے ملکوں میں سب سے آگے ہے۔

حالیہ دنوں میں جن افراد کو منشیات کی وجہ سے پھانسی دی گئی ہے ان میں سے تین کو ایرانی صوبے اردابیل میں پھانسی دی گئی۔ سرکاری خبر رساں ادارے 'ارنا ' کے مطابق ان پر الزام تھا کہ یہ تینوں پوست کی خرید داری اور ٹرانسپورٹیشن میں ملوث تھے۔

جبکہ دوسرے چھ افراد کو ہیروئن ، کانابس اور میتھام فیٹامائن کی نقل و حمل کے جرم میں ملوث ہونے کے جرم میں پھانسی کی سزا دی گئی ہے۔

واضح رہے افغانستان اور یورپ کے درمیان پوست کی سمگلنگ کے لیے ایران اہم راستہ بن جاتا ہے۔ جبکہ خود ایران میں بھی پوست کا استعمال کافی زیادہ ہے۔ اقوام متحدہ کی 2021 کی دستاویز کے مطابق ایران میں 28 لاکھ افراد منشیات استعمال کرتے ہیں۔

ایرانی حکام نے منشیات کے اس چیلنج سے نمٹنے کے لیے کئی بار مہم چلائی ہے اور کئ بار بھاری مقدار میں سمگلروں کے قبضے سے منشیات قبضے میں بھی لینے کا اعلان کیا ہے۔

ایمنیسٹی کی جون 2023 میں شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق ایران میں سال 2023 کے پہلے پانچ ماہ کے دوران کم از کم 173 افراد کو منشیات کے دھندے میں ملوث ہونے پر پھانسی پر لٹکایا گیا۔

ناروے میں قائم ایک ادارے کی رپورٹ کے مطابق 2023 کے پورے سال کے دوران مجموعی طور پر سات سو سے زائد افراد کوپھانسی پر چڑھایا گیا، ان میں منشیات کے دھندے کے علاوہ دیگر جرائم میں ملوث لوگ بھی شامل تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں