آسٹریلوی طیارے کے عملے کا فلسطینی جھنڈے والےبیج لگا کر اظہار یکجہتی پر مسافر ناراض

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

آسٹریلوی کنٹاس ایئرلائن کے طیارے کے عملے نے غزہ کے ساتھ اپنی یکجہتی کا اظہار اس وقت کیا جب انہوں نے میلبورن سے آسٹریلیا کے ہوبارٹ کے علاقے میں پرواز کے دوران فلسطینی جھنڈے والے بیجوں کو اپنے یونیفارم پر لگا دیا، تو اس پر بہت سے مسافر اور دوسرے لوگ سخت ناراض ہوگئے۔

اس معاملے نے پرواز میں موجود متعدد مسافروں کو ناراض کیا، اس کے علاوہ آسٹریلیا میں یہودی حکام کی طرف سے ردعمل کا اظہار کیا گیا۔

برطانوی اسکائی نیوز نیٹ ورک کی رپورٹ کے مطابق آسٹریلوی یہودی رہ نما رابرٹ گریگوری نے کہا کہ "سیاسی سرگرمیوں کی پروازوں میں کوئی جگہ نہیں ہے جہاں لوگ چھٹیاں گذارنے کے لیے سفر کرتے ہیں"۔

دریں اثنا آسٹریلین جیوش ایسوسی ایشن کے سی ای او مارکس نے فلائٹ میں حصہ لینے والے کنٹاس ملازمین کو برطرف کرنے کا مطالبہ کیا۔

دوسری جانب کنٹاس کے ترجمان نے ملازمین کے اس عمل پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ جھنڈوں اور بیجز کی جگہ کا تعین ایئرلائن کی یکساں پالیسی کے مطابق نہیں ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ "کیبن کریو کو کوئی بیج پہننے کی اجازت نہیں ہے جب تک کہ وہ منظور شدہ یونیفارم پالیسی کا حصہ نہ ہوں"۔

یہ پہلا واقعہ نہیں

گذشتہ دسمبر میں کنٹاس کی ملکیت والی بجٹ ایئر لائن جیٹ اسٹار پر سوار ایک مسافر نے الزام لگایا کہ ایک ملازم نے اپنی پرواز پر اپنے سیاسی خیالات کا اظہار کرنے کے لیے مسافروں سے خطاب کرنے کے لیے جہاز کے مائیکروفون کا استعمال کیا۔ خاتون کا کہنا تھا کہ ملازم نے میلبورن سے بالینا جانے والی فلائٹ میں ٹیک آف کے اعلان کے اختتام پر "فلسطین کو آزاد کرو" کہا، جس سے وہ "غصے" میں آگئی۔

ایک اور واقعے میں ایک اور خاتون نے الزام لگایا کہ نومبر کے آخر میں اسرائیل سے واپسی پرکنٹاس کے ایک چیک ان ملازم نے اس سے پوچھا کہ کیا وہ "بم کی آواز سن سکتی ہے" جو اس کی حکومت غزہ پر بمباری کے حوالے سے "گرا رہی ہے؟"۔

خاتون کے مطابق کنٹاس کارکن نے مزید کہا کہ "آپ کی حکومت جو کچھ کر رہی ہے وہ خوفناک ہے۔"

اکتوبر میں اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ شروع ہونے کے بعد سے مظاہروں اور سوشل میڈیا کے ذریعے فلسطینیوں کے ساتھ بین الاقوامی یکجہتی میں اضافہ ہوا ہے۔ خاص طور پر غزہ کی پٹی پر اسرائیلی بمباری ہونے والی ہلاکتوں کی وجہ سے فلسطینیوں کے ساتھ ہمدردی کے جذبات بڑھتے جا رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں