تربوز سے بنا فلسطین کا نقشہ، مشہور اداکارہ کی بیٹی پر اسرائیلی سیخ پا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی سٹار بین ایفلیک اور مشہور اداکارہ جینیفر گارنر کی بیٹی وائلٹ ایفلیک نے فلسطینیوں کی حمایت کی وجہ سے اسرائیلی حلقوں میں غصے کی لہر کو جنم دیا ہے۔ وہ اپنی والدہ کے ساتھ شاپنگ ٹرپ کے دوران فلسطین کے نقشے والی ٹی شرٹ پہنے نظر آئیں جسے فلسطینیوں کی حمایت کی علامت کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔

منگل کے روز بیورلی ہلز میں چینل اسٹور کا دورہ کرتے ہوئے 18 سالہ نوجوان لڑکی کو اپنی والدہ گارنر کے ساتھ دیکھا گیا، جب کہ وائلٹ نے سیاہ رنگ کی وئیر دی پیس جیکٹ پہنی تھی جس پر تربوز کے رنگوں میں فلسطین کا نقشہ تھا۔

غزہ کی پٹی پر گذشتہ سات اکتوبر سے جاری اسرائیلی جنگ کے دوران تربوز کی علامت جو فلسطینی پرچم کے رنگوں والا پھل ہے حال ہی میں بین الاقوامی شہرت حاصل کر چکا ہے۔

اس جیکٹ کو تیار کرنے والی کپڑے کی کمپنی کی ویب سائٹ کے مطابق اس شرٹ کی قیمت 38 ڈالر ہے، اس کی فروخت سے حاصل ہونے والے منافع کا 100 فی صد غزہ کی مدد کے لیے جاتا ہے۔

دوسری طرف وائلٹ کی جیکٹ پہننے سے اسرائیلی سخت برہم دکھائی دیتے ہیں۔ "یہود دشمنی بند کرو" نامی سوشل میڈیا پیج نے یہ کہہ کر تبصرہ کیا کہ "جیکٹ کے ذریعے اٹھائی گئی علامت اسرائیل کی پوری ریاست کو مٹا دیتی دینے کی علامت ہے"۔

اس تصویر کے بعد امریکی خاتون کے موقف کے حامیوں اور اس کی مخالفت کرنے والوں کے درمیان تقریباً 7 ملین ویوز اور 6000 سے زیادہ تبصرے ملے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ بین ایفلیک اور گارنر کی بڑی بیٹی اکثر اسپاٹ لائٹ سے دور رہتی ہیں۔ انہوں نے گذشتہ سال 4 جولائی کو مائیکل روبن کی پارٹی میں توجہ حاصل کی تھی، جس میں اس نے اپنے والد اور سوتیلی ماں جینیفر لوپیز کے ساتھ شرکت کی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں