سعودی عرب: عسیر کتاب میلے میں شہریوں کا جم غفیر امڈ آیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں ادب واشاعت اور ترجمہ اتھارٹی کے زیراہتمام عسیر گورنری کے علاقے خمیس مشیط میں پرنس سلطان کلچرل سینٹر میں منعقد ہونے والے دوسرے سالانہ کتاب میلے میں بڑی تعداد میں شہریوں کی طرف سے پذیرائی حاصل ہوئی ہے۔

’کتاب وقرائت‘ کے عنوان سے منعقدہ کتاب میلے میں نہ صرف عسیر بلکہ ملک کے دوسرے علاقوں سے بھی شہری شرکت کررہے ہیں۔

یہ میلہ ممتاز ترین سعودی اور بین الاقوامی دانشوروں کو اپنی طرف متوجہ کرنے، معاشرے کے مختلف طبقات کے متنوع سامعین کے سامنے اپنی تخلیقات پیش کرنے اور مختلف طبقات کے ساتھ ادب، اشاعت اور ترجمہ کے شعبوں میں تعاون اور شراکت کو بڑھانے، نجی اورغیر منافع بخش شعبوں کو ادبی تحریک کو تقویت دینے میں اپنا حصہ ڈالنے میں معاون ثابت ہوگا۔

ثقافتی پروگرام

میلے کا مقص ادب سے لے کر مختلف ثقافتی شعبوں تک ایک جامع ثقافتی پروگرام پیش کرنا تھا تاکہ زائرین کو تخلیقی سرگرمیوں کے ساتھ ایک بھرپور اور دلچسپ تجربہ حاصل کرنے کی ترغیب دی جا سکے جس میں مکالمے کے سیشن، راستوں کے اطراف کے درمیان نظمیں، آرٹ اور کہانی کا پلیٹ فارم، ادبی چیلنجز اور انٹرایکٹو تجربات شامل ہیں۔

دیگر شعبوں کے علاوہ بچوں اور نوجوان مہم جوئیوں کے لیے ایک الگ سے جگہ مختص ہے، سنیما کی نمائش کا علاقہ، "الفنا" باغ، ادبی واک وےاور دیگر ثقافتی اور ادبی سرگرمیاں شامل ہیں۔

’رائٹرز اینڈ ریڈرز فیسٹیول‘ نے زائرین کو ادیبوں سے ملنے اور مشہور ادبی کاموں سے متاثر ایک عشائیہ سے لطف اندوز ہونے کا موقع بھی فراہم کیا۔

اس سے سعودی شناخت اور مقامی ثقافت میں اضافہ ہو گا۔ اس کے علاوہ ایک سیکشن 19 ریستوران اور کیفے شامل ہیں۔ ایک پلیٹ فارم کافی چکھنے کے لیے وقف ہے۔ زائرین کسانوں کی مصنوعات کو بھی تلاش کر سکتے ہیں۔ مقامی بازار اور دستکاری کے گوشے بھی زائرین کو اپنی توجہ متوجہ کرنے کے لیے غیرمعمولی کشش رکھتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں