ترکیہ:ایردوآن نے سابق وزیر ماحولیات کو استنبول کے لیے مئیر شپ کا امیدوار نامزد کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ترکیہ میں حکمران جماعت نے پانچ سال بعد ایک بار پھر استنبول کی بلدیاتی قیادت اپنے ہاتھ میں لینے کی کوشش کے طور پر اتوار کے روز سابق وزیر ماحولیات مورت کرم کو 'اے کے پارٹی' کی طرف سے مئیر شپ کا امیدوار نامزد کر دیا ہے۔ یہ انتخابات ماہ مارچ میں متوقع ہے۔

2019 میں اپوزیشن نے استنبول کی مئیر شپ جیت لی تھی۔ اپوزیشن کی اس جیت کے نتیجے میں اے کے پارٹی کا استنبول میں 25 سالہ اقتدار ختم ہوا تھا۔

' اے کے پارٹی ' کے طیب ایردوآن نے ماہ مئی میں دوبارہ صدارتی انتخاب جیتا تھا ، اس میں ان کے اتحادی قوم پرست بھی ساتھ تھے۔ اب ایک بار پھر امکان بڑھا ہے کہ اے کے پارٹی اپنے اتحادیوں کی مدد سے 31 مارچ ہونے والے انتخاب میں استبول کی مئیر شپ بھی ایک بار پھر جیت لے گی۔

طیب ایردوآن نے مئیر شپ کے لیے اپنے امیدوار کا اعلان کرتے ہوئے کہا ' ہم کندھے سے کندھا ملا کر ایک بار پھر استنبول کو واپس لیں گے۔ '

47 سالہ کرم جولائی ماحولیات اور اربنائزیشن کے 2018 سے جون 2023 تک وزیر رہے ہیں۔ وہ اس سے پہلے استنبول سے پارلیمنٹ کے رکن منتخب ہوئے تھے۔ واضح رہے استنبول سولہ ملین کی آبادی کا شہر ہے، جو ملک کی مجموعی آبادی کا بیس فیصد ہے۔

ترکیہ کی 'اے کے پارٹی' کے امیدوار برائے مئیر شپ نے فروری 2023 میں آنے والے زلزلے کے متاثرین کے لیے خوب سرگرمی سے کام کیا تھا۔ خیال رہے کہ زلزلے میں 50000 لوگ ہلاک ہوئے ہیں۔ یہ امیدوار یونیورسٹی سے انجینئیرنگ کی تعلیم پا رکھی ہے۔

ایردوآن نے دو درجن سے زائد شہروں کے لیے مئیرشپ کے عہدوں کے لیے امیدوار نامزد کیے ہیں۔ تاہم ابھی دارالحکومت انقرہ سمیت کے لیے ایسے امیدواروں کا اعلان اسی ماہ کے دوران کرنے جا رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں