ایران یقینی طور پر حوثیوں کے سمندری حملوں کی ہدایت کرتا ہے: برطانیہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بحیرہ احمر میں حوثیوں کے حملے کے بعد برطانیہ نے زور دیا ہے کہ یمنی حوثی گروپ اس کے نتائج بھگتیں گے۔

برطانوی وزیر دفاع گرانٹ شیپس نے بدھ کے روز کہا کہ بحیرہ احمر کی صورتحال اس طرح جاری نہیں رہ سکتی۔

خبر رساں ادارے ’رائیٹرز‘ کے مطابق انہوں نے ایران پر ملوث ہونے کا الزام بھی لگاتے ہوئے کہا کہ "اس میں کوئی شک نہیں کہ ایرانی بحیرہ احمر میں حملوں کے لیے ضروری رہ نمائی فراہم کر کے حوثیوں کی مدد کر رہے ہیں"۔

"ہم نیویگیشن کی حفاظت کریں گے"

آج بدھ کو برطانوی وزیر خارجہ شیپس نے اپنے’ایکس‘ اکاؤنٹ پر شائع ہونے والے ایک مختصر بیان میں کہا انہوں نے وضاحت کی کہ ایک برطانوی جنگی جہاز نے اپنی توپوں اور میزائلوں سے کئی حملہ آور ڈرونز کو تباہ کیا۔

انہوں نے خبردار کیا کہ اگر یہ غیر قانونی حملے جاری رہے تو حوثی اس کے نتائج بھگتیں گے۔ برطانیہ بین الاقوامی نیویگیشن کے تحفظ کے لیے ضروری اقدامات کرے گا۔

یہ امریکی سینٹرل کمانڈ کی جانب سے انکشاف کیا گیا ہے کہ اس کے طیارے "گارڈین آف پراسپرٹی" اتحادی افواج کی مدد سے ایک اینٹی شپ بیلسٹک میزائل کے علاوہ 18 ڈرونز اور دو اینٹی شپ کروز میزائلوں کو مار گریا۔ یہ حملہ حوثیوں کی جانب سے کل منگل کو بحیرہ احمرمیں جہازوں پر کیا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں