بھارت کا بحیرہ عرب میں مزید جنگی جہاز اتارنے کا فیصلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

بھارت نے فیصلہ کیا ہے کہ بحیرہ عرب میں اپنی فوجی قوت میں اضافہ کرے گا ۔ بھارت کا یہ فیصلہ بظاہر اس خطرے کے پیش نظر ہوئے جو حوثیوں کی طرف سے اسرائیل جانے والے اور اسرائیلی تجارتی جہازوں پر مسلسل ڈرون حملوں کی کوششوں سے پیدا ہوا ہے،تاہم بھارت کے اپنے خطے کے ایشوز بھی ایک سبب سمجھے جا رہے ہیں۔

بھارت چاہتا ہے کہ اپریل مئی میں متوقع انتخابات کے ماحول می پاکستان پر دباؤ کی فضا قائم رکھے رکھنا بھی ضروری ہے ۔

بھارتی حکام کے مطابق کم از کم ایک درجن بحری جنگی جہاز بحیرہ عرب میں اتارے جا رہے ہیں، تاہم بھارت اپنی اس چال کا باضابطہ اعلان ابھی نہیں کر رہا ہے۔

واضح رہے بھارت نے ماہ دسمبر میں ایک اطلاع کے مطابق دو سے پانچ بحری جنگی جہاز اس سمندری علاقے میں ماہ دسمبر کے دوارن اتار ے تھے۔

اس سے پہلے ایک اسرائیلی جہاز کو حوثیوں نے بھارتی ساحل سے 370 کلو میٹر کے فاصلے پر نشانہ بنایا تھا، تاہم بھاری کمانڈوز نے عملے کے سبھی ارکان کو بچا لینے کا دعوی کیا تھا۔
بھارتی ذرائع کے مطابق ان جنگی جہازوں پر کمانڈوز تعینات ہوں گے اور ہیلی کاپٹروں کا بیک اپ بھی موجود ہو گا۔ نیز امریکی ساختہ ایم کیو 9 ڈرونز بھی ہمراہ ہوں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں