انڈونیشیا: غزہ میں جنگ بندی کے لیے امریکی سفارت خانے کے سامنے مظاہرہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

آبادی کے اعتبار سے سب بڑے اسلامی ملک انڈونیشیا میں ایک مرتبہ پھر فلسطینییوں اور غزہ میں جنگ بندی کے حق میں ہزاروں انڈونیشیائی شہریوں نے احتجاجی مظاہرہ کیا ہے۔ پولیس اور سکیورٹی اہلکاروں کی بڑی تعداد سفارتخانے کی حفاظت کے لیے تعینات کرنا پڑ گئی۔

انڈونیشیائی مظاہرین نے اس سلسلے میں احتجاج کے لیے اسرائیل کے سب سے بڑے سرپرست اتحادی امریکی سفارت خانے کے سامنے احتجاج کا فیصلہ کیا تھا۔

انڈونیشیا کے دارالحکومت جکارتہ میں امریکی سفارت خانے کے سامنے احتجاجی مظاہرے کے اعلان کے مطابق ہفتے کے روز ہزاروں مظاہرین جمع ہو گئے، جو فوری جنگ بندی کے حق میں نعرہ بازی کر رہے تھے۔

اس موقع پر سیکیورٹی اہلکاروں کی بڑی تعداد کو سفارت خانے کی حفاظت کے لیے تعینات کیا گیا تھا۔ امریکی سفارتخانہ جکارتہ کے 'ڈاؤن ٹاؤن' کے علاقے میں واقع ہے۔ مظاہرین مکمل پر امن تھے مگر بھر پور انداز میں نعرے لگارہے تھے۔ مظاہرین کا سب سے اہم مطالبہ غزہ میں جنگ بندی کا تھا۔

اس احتجاجی مظاہرے کا اعلان 'انڈونیشیا ماس آرگنائزیشن کونسل' کی طرف سے کیا گیا تھا تاکہ فلسطینیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا جاسکے۔ مظاہرین نے سیاہ اور سفید رنگ کے کپڑے زیب تن کر رکھا تھا اور عالمی سطح پر جنگ بندی کے حق میں منائے جانے والے دن کے حوالے سے جمع تھے۔

ان کے ہاتھوں میں انڈونیشیا اور فلسطین کے پرچم تھے۔ اس کے علاوہ اسرائیل کا بائیکاٹ کرنے اور فوری جنگ بندی کا مطالبہ کر رہے تھے۔

واضح رہے اس سے پہلے بھی انڈونیشیا میں فلسطینیوں کے حق میں اسرائیلی جنگی جارحیت کے خلاف کئی بڑے بڑے مطاہرے کیے جا چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں