یوکرین کے لیے 3.2 ارب ڈالر کی برطانوی امداد کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

جنگ زدہ یوکرین کے دورے پر آئے برطانوی وزیر اعظم رشی سنک نے جمعہ کے روز 3،2 ارب ڈالر کی نئی فوجی امداد کا اعلان کرتے ہوئے کہا ' یہ برطانیہ کی جانب سے جنگ سے دوچار یوکرین کے لیے حمایت کا مضبوط اشارہ ہے۔'

برطانیہ کی طرف سے یہ امدادی پیکج آنے والے سال میں بروئے کار ہو گا جو 2022 اور 2023 کے برسوں کے مقابلے میں 200 ملین پاؤنڈ زیادہ ہے۔

رشی سونک کے دفتر سے جاری کردہ بیان کے مطابق سونک نےکہا ' اس امداد کے ذریعے یہ یقینی ہو جائے گا کہ اب تک کی ڈرونز کے سلسلے میں سب سے بڑی امداد دی گئی ہے۔' نیز یہ یوکرین کے عوام کے لیے ایک مضبوط حمایت کا اشارہ ثبات ہو گا۔'

اس کے ساتھ ہی بیان میں یہ بھی کہا گیا ہے' روسی صدر ولادی میر پیتن کو یہ باور رہنا چاہیے کہ ہم کہیں گئے، میں یہاں ہوں پورے اور واضح پیغام کے ساتھ ہوں کہ برطانیہ یوکرین کے ساتھ کھڑا ہے۔'

برطانوی وزیر اعظم نے یوکرین کے ساتھ کھڑا ہونے کی یہ اصطلاح جارح روس کے خلاف بالکل اسی طرح استعمال کی ہے جس طرح امریکہ اور مغربی ممالک غزہ جنگ میں اسرائیل کے ساتھ کھڑے ہونے کا واضح اعلان کر ررکھا ہے۔

سونک نے یوکرین میں ہنگامی حالات میں کام کرنے والے یوکرینی کارکنوں سے ملاقات میں اور ان کے حوصلے کی تعریف کی۔ یہ کارکن روسی حملوں کے بعد مدد کے لیے پہنچتے ہیں۔

یوکرینی صدر زیلنسکی کے صدر کے دفتر کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے ' برطانیہ نے یوکرین کے لیے ایک تاریخی سیکیورٹی پیکج دیا ہے۔ یہ سو سالہ ناقابل شکست شراکت کے لیے ' ٹوٹیمک معاہدہ ' پہلا قدم ہونا چاہیے۔'

واضح رہے اس امدادی پیکج میں سے کم از کم 200 ملین پاؤنڈ کی رقم ہزاروں ڈرون طیاروں کی خریداری اور تیاری پر خرچ کیے جائیں گے۔ یہ فوجی ڈرونز روسی میزائلوں کی نگرانی کے لیے بھی استعمال کیے جائیں گے۔ سنک کے مطابق امدادی پیکج اس سال کے پہلے حصے میں ہی مل جائے گا۔

اس تازہ ترین پیکج کے ساتھ یوکرین کی جنگ کے لیے برطانوی امداد کا مجموعی حجم 12 ارب پاؤنڈ ہو جائے گا۔

وزیرخارجہ ڈیوڈ کیمرو ن نے صدر زیلنسکی سے ایک ملاقات میں کہا ' ہم آپ کی اخلاقی، سفارتی، معاشی امداد جاری رکھیں گے اور سب سے بڑھ کر فوجی امداد کرتے رہیں گے۔ یہ اس سال بھی جارہے گی، اگلے سال بھی جاری رہے اور جب تک اس کی ضرورت رہے گی امداد ہوتی رہے گی۔ '

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں