افغانستان کے صوبہ نیمروز کے گورنر ہاؤس پر خود کش حملہ، تین محافظ زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

افغانستان کے مغربی صوبے نمروز میں ایک خود کش حملہ آور نے گورنر کے دفتر پرحملہ کر کے تین محافظوں کو زخمی کر دیا ہے۔ یہ بات طالبان حکام نے باضابطہ طور پر بتائی ہے۔

حکام کے مطابق خود کش حملہ آور نے اپنی بارود بھری جیکٹ کو اس وقت ڈیٹو نیٹر سے اڑا لیا جب وہ ایک صوبے نمروز کے گورنر ہاؤس میں داخل ہونے کی کوشش کر رہا تھا۔ اس دوران راستے میں آنے والے تین محافظ زخمی ہو گئے۔

طالبان کے وزیر داخلہ کے ترجمان عبدالمتین قانی نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ' ایکس' پر لگائی گئی پوسٹ میں اس واقعے کی تصدیق کی ہے۔

تاہم اس واقعے کی ابھی تک کسی گروہ یا ملک نے ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔ واضح رہے طالبان کی حکومت کو امریکہ سمیت کسی بھی ملک نے ابھی تک باضابطہ تسلیم نہیں کیا ہے۔ تاہم غیر رسمی انداز میں کئی ملکوں نے طالبان کے ساتھ روابط قائم کر لیے ہیں۔

طالبان نے امریکہ کے افغانستان سے ایک معاہدے کے تحت 15 اگست 2021 کو افغانستان میں عنان حکومت سنبھالی تھی۔ جبکہ امریکہ نے اس معاہدے کےتحت افغانستان سے چپ چاپ انخلاء قبول کر کے پوری دنیا کو حیران کر دیا تھا۔ طالبان نے امریکہ کو افغانستان سے نکلنے لیے محفوظ راستہ دیا تھا مگر آج بھی امریکہ نے طالبان حکومت کو تسلیم نہیں کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں