آئیوا میں ری پبلکن کاکس میں ٹرمپ سرفہرست صدارتی امیدوار

آئیوا کے بعض علاقوں میں درجہ حرارت منفی 23 ڈگری ہونے کے باوجود پارٹی کے رہنماؤں اور کارکنوں نے بحث و مباحثے میں حصہ لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکہ کی ریاست آئیوا میں ری پبلکن کاکس میں ڈونلڈ ٹرمپ ایک بار پھر سرفہرست صدارتی امیدوار بن کر ابھرے ہیں۔ آئیوا کاکس میں ابھی یہ بات بھی سامنے نہیں آئی کہ دوسرے نمبر پر ری پبلکن پارٹی کا صدارتی امیدوار کون منتخب کیا گیا ہے۔

آئیوا کے بعض علاقوں میں درجہ حرارت منفی 23 ڈگری رہا مگر سخت سردی کے باوجود آئیوا کاکس میں ری پبلکن پارٹی کے رہنماؤں اور کارکنوں نے نومبر کے صدارتی الیکشن میں اپنا امیدوار چننے کے لیے بحث و مباحثے میں حصہ لیا اور ووٹ ڈالے۔

سن دو ہزار بیس میں ڈونلڈ ٹرمپ نے آئیوا کاکس میں 97 فیصد ووٹ لے کر تمام امیدواروں پر غیرمعمولی سبقت لے لی تھی۔ اس بار بھی ٹرمپ ہی سرفہرست امیدوار کے طور پر سامنے آئے ہیں تاہم انہیں حاصل ووٹ ابھی سامنے نہیں آئے۔ ابھی یہ واضح نہیں کہ ری پبلکن پارٹی میں رنر اپ کون ہو گا۔

فلوریڈا کے گورنر ران ڈی سانٹیس جگہ بنانے میں کامیاب ہوں گے، بزنس مین وویک رام سوامی یا اقوام متحدہ میں امریکہ کی سابق سفیر نکی ہیلی دوسرے نمبر پر آئیں گی۔ ڈی سانٹیس دوسرے نمبر پر آئے تو ان کا بحیثیت صدارتی امیدوار بننے کے خواہش مند ہونے کا مستقبل دھندلانے کا خدشہ ہے۔ پارٹی امور سے متعلق آئیوا ڈیموکریٹس کی کاکس بھی جاری ہے تاہم اس کے لیے آن لائن ووٹنگ کی جا رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں