ترکیہ: پہلا خلا باز خلائی مشن پر جانے کو تیار

ترکیہ کی نئی شناخت اور نئےعزائم کی نئی تجسیم ہو گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

رجب طیب ایردوآن کے زیر قیادت ترکیہ کو آنے والے ہفتے میں خلائی میدان میں ایک نئی شناخت اور فخر ملنے کی امید ہے۔ یہ ترکیہ کے پہلے خلانورد کی صورت ہو گی جو خلائی مشن پر روانہ ہو گا۔ روانگی بین الاقوامی خلائی مرکز ' آئی ایس ایس ' سے اڑان پکڑے گا۔

ترکیہ کی فضائیہ میں 43 سالہ کرنل آلپر گیزر اوکی ایک فائٹر پائلٹ ہیں۔ جو اس پہلے خلائی مشن پر روانہ ہو رہے ہیں۔ ان کا یہ غیر معمولی سفر بدھ کے روز 'کیپ کینورال سپیس فورس سٹیشن' سے شروع ہو رہا ہے۔ مبصرین کا خیال ہے کہ ترکیہ کی یہ کامیابی طیب ایردوآن کے 'جیو پولیٹیکل ' عزائم کو ایک اور بڑھاوا دے گی۔

ایردوان نے منگل کو خلائی مشن کے بارے میں کہا کہ "ہم اسے بڑھتے ہوئے، مضبوط اور پرعزم ترکی کی ایک نئی علامت کے طور پر دیکھتے ہیں۔

ترکیہ کے اس خلاباز کو سویڈن، اٹلی ، سپین کے خلا بازوں کی ہمراہی حاصل ہو گی۔ یہ خلائی مرکز سے ایک نجی خلائی کمپنی ایکیوم سپیس کی خلائی گاڑی پر روانہ ہوں گے۔ اس کمپنی کی طرف سے یہ ' ناسا ' کے ساتھ تعاون کے تحت تیسار خلائی مشن ہو گا۔

طیب ایردوآن نے خلائی مشن میں گہری دلچسپی ظاہر کی ہے۔ واضح رہے ترکیہ کے صدر طیب ایردوآن اپنی تمام تر کوششوں کے باوجود عالمی سطح پر وہ اثر رسوخ حاصل نہیں کر سکے جو وہ چاہتے ہیں۔ غزہ کی جاری جنگ کے معاملے میں بھی یہی دیکھنے میں آیا ہے اور یوکرین کی جنگ کے معاملے میں بھی۔ '

ایردوان نے منگل کے روز اس خلائی مشن کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا ہم اسے بڑھتے ہوئے، مضبوط اور پرعزم ترکیہ کی ایک نئی علامت کے طور پر دیکھ رہے ہیں۔'

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں